اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

صدام حسین کو گرفتار کر لیا گیا

بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں درندگی کی انتہا کردی

بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں درندگی کی انتہا کردی
تحریر میاں نصیراحمد
بھارت دنیا بھر میں انسانی حقوق کی بد ترین مثالیں قائم کر رہا ہے، مگر اقوام عالم کا رد عمل اتنا موثر نہیں،کشمیر پر بھارتی مظالم کی داستان سات دہائیوں سے زائد عرصہ پر محیط ہے لیکن حالیہ لہر میں قابض بھارتی فورسز نے ظلم و بربریت کے ریکارڈ توڑ دیئے ہیں ،عالمی برادری کشمیر میں جاری بھارتی ظلم و جبر کو بند کروانے کیلئے اپنا کردار ادا کرے اور غیر جانبدار عالمی اداروں، صحافیوں اور انسانی حقوق کی تنظیموں کے مقبوضہ کشمیر میں آزادانہ اور مستقل رسائی کیلئے بھارت پر دباؤ ڈالے، اقوام متحدہ اور بلخصوص اسلامی ممالک کو بھارتی استبداد کا سختی سے نوٹس لینا چاہیے ،کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی ہو رہی ہے یہاں پر بڑی غورطلب بات یہ ہے کہ آخر کب تک بھارتی فوج خواتین کے سہاگ ، ماوں کی گود اور جوانوں کے سینے چھلنی کرتے رہیں گے، بھارت کی جانب سے ریاستی دہشتگردی کی جارہی ہے، ہزاروں عورتوں کو ان کے شوہروں اور والدین کو بچوں سے محروم کیا جا رہا ہے بڑے پیمانے پر قتل و غارت ہو رہی ہے ۔کشمیری آزادی چاہتے ہیں بھارت کے خلاف اقوام متحدہ کی قراردادیں حرکت میں نہیں آرہی ایسا کیوں ہے یہ ایسا سوال ہے جس کا جواب دنیا کے سامنے نہیں آرہا یہاں پربڑی غور طلب بات یہ ہے کہ پاکستان ہر فورم پر کشمیر کی سفارتی ، اخلاقی مدد جاری رکھے ہوئے ہے اور مسئلہ کشمیر کو حل کرانے کیلئے اپنا بھر پور کردار ادا کررہا ہے موجودہ صورتحال کی تمام تر ذمہ داری بھارتی حکومت پر عائد ہوتی ہے بندوقوں سے زخمی ہونے اور بینائی چلے جانے کے باوجود بھی کشمیری عوام بھارتی جبر و ظلم کے سامنے ڈٹے ہوئے ہیں، وہ اپنے حق خود ارادیت کا حصول چاہتے ہیں لیکن دوسری جانب بھارتی حکومت ایک بار پھر عوامی رائے کو یکسر نظر انداز کر کے طاقت کے ذریعے انہیں دبانے کی کوشش میں مصروف ہے اور دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کا دعویدا ر بھارت عوامی احتجاج کو طاقت کے بل بوتے پر دبانے کی کوشش کر رہاہے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں حد سے زیادہ بڑتے جارہی ہے مقبوضہ کشمیر میں ایک بار پھر بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی عروج پر پہنچ گئی‘ پاکستان نے بھارتی فورسز کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں بے گناہ شہریوں کے قتل عام پر زور مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری بالخصوص اقوام متحدہ، او ائی سی اور انسانی حقوق کی تنظیموں پر زور دیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں کا بے رحمانہ قتل عام رکوائیں بھارت مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کے مظالم سے عالمی برادری کی توجہ ہٹانے کے لیے کنٹرول لائن پر تناؤ میں اضافہ کر رہاہے ،کشمیریوں کو خوف اور جبر سے آزاد زندگی گزارنے کا پورا حق ہے اور پاکستان عوام ا ن کے حق خود ارادیت اور سیاسی جدوجہد کا ساتھ دینا جاری رکھیں گے پوری دنیا بھارت سے مطالبہ کرے کہ صحافیوں کو مقبوضہ کشمیر میں جا کر اصل صورتحال کو دنیا کے سامنے رکھنے کی اجازت دی جائے، بھارتی قیادت کی تنگ نظری اور کوتاہ اندیشی کے باعث ہندوستان آج تک کشمیریوں کی ہمدردیاں حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکا،بلکہ کشمیریوں پر روا رکھے جانے والے مظالم کی وجہ سے وہ دنیا بھر میں بدنام ہو رہا ہے۔بھارت کی ریاستی دہشت گردی پربین الاقوامی اداروں کی خاموشی افسوناک ہے پوری پاکستانی قوم کشمیریوں کی پشت پرکھڑی ہے حکومت پاکستان کا بھی یہی موقف ہے کہ کشمیرپرایساکوئی فیصلہ نہ کیاجائیگا جس سے کشمیریوں کی دل آزاری ہو،پاکستان کشمیریوں کے ہر فیصلے کا احترام کرتا ہے اورانہیں آزادی کاحق ملنے تک ہرسطح پران کی حمایت جاری ر کھے گا پاکستان مسئلہ کشمیر سے متعلق اپنے اصولی موقف پر مضبوطی سے قائم ہے کہ جنوبی ایشیاء میں پائیدار امن کیلئے کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق مسئلے کا حل انتہائی ضروری ہے بھارت ریاستی جبر و تشدد سے کشمیریوں کو زیادہ دیر تک ان کے بنیادی حق سے محروم نہیں رکھا جا سکتا، پاکستانی عوام مظلوم کشمیریوں کے حق کیلئے آواز اٹھاتے رہی گی پاکستانی عوام میں اس شعور اور احساس کو اجاگر کیا جائے کہ آزادی کشمیر کی تحریک خود پاکستان کے بقاؤسا لمیت کی تحریک ہے۔بھارت نے ریاست جموں و کشمیر میں آٹھ لاکھ سیکورٹی فورسز کی تعیناتی سے کشمیریوں کو آزادی جیسی عظیم نعمت سے محروم کر رکھا ہے بھارت مقبوضہ کشمیر میں ریاستی دہشت گردی بند کرے اور آ ٹھ لاکھ فوج باہر نکالے وگرنہ خطہ میں کسی صورت امن قائم نہیں ہو سکتا، کشمیریوں کی مدد و حمایت کیلئے پوری قوم مظلوم کشمیری مسلمانوں کی پشت پر کھڑی ہے مظلوم کشمیریوں کوحق خودارادیت ملنے تک جنوبی ایشیا میں کسی صورت امن قائم نہیں ہو سکتااقوام متحدہ اور دیگر عالمی اداروں نے مسئلہ کشمیر کے حوالہ سے دوہرامعیار اپنا رکھا ہے کشمیر کی محبت ہماری رگوں میں خون کی طرح دوڑتی ہے مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ ڈھائے جارہے ہیں کشمیری سالہ سال سے قربانیاں پیش کر رہے ہیں اور وہ آج بھی اپنی آزادی کے لیے عزم و حوصلے کے ساتھ استقامت کا ثبوت دے رہے ہیں مقبوضہ کشمیر میں نہتے شہریوں کو بھارتی سفاکانہ جبر سے آزادی دلوائی جائے۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں میں کشمیری عوام کو حق خودارادیت دلانے کا وعدہ کیا گیا ہے جسے پورا کیا جانا چاہیے، قابض حکام انہیں اس حق سے محروم رکھنے کے لئے وحشیانہ مظالم کا نشانہ بنا رہے ہیں انڈین سیکیورٹی فورسز پیلیٹ گنز کا استعمال کرکے کشمیریوں سے ان کی بینائی تو چھین سکتی ہے لیکن کشمیریوں کی حق خودارادیت کے حصول کے لیے کی جانے والی کوششوں کو نہیں دباسکتی۔بھارت کی مرکزی حکومت نے کشمیر میں ہر مزاحمت اور مخالفت کو سختی سے کچلنے کی پالیسی اختیار کر رکھی ہے کشمیر کے مسئلے کا حل تشدد، جبر اور ظلم نہیں ہے مقبوضہ کشمیر کی بگڑتی صورتحال خطے کے لئے بہت بڑا خطرہ ہے، بھارت کے زیر تسلط جموں وکشمیر کی عوام کو ان کے حق خودارادیت سے محروم رکھنے کے لئے وہاں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں ہورہی ہیں .مقبوضہ وادی میں کرفیو سے لوگوں کی زندگیاں اجیرن ہوچکی ہیں، مقبوضہ کشمیر میں شہریوں کو ہلاک اور بینائی سے محروم کیاجارہا ہے اور دنیا سے حقائق چھپانے کے لئے میڈیا کے خلاف کریک ڈاؤن کیا جا رہا ہے کشمیری مسلمانوں کی قربانیاں جلد ان شائاللہ رنگ لانے والی ہیں اورکشمیری شہیدوں کا خون رائیگاں نہیں جائے گا

Author: