اشاعت کے باوقار 30 سال

بھارت میں طلباء کا پکوڑے بیچ کر احتجاج

بھارت میں طلباء کا پکوڑے بیچ کر احتجاج

نئی دہلی : پکوڑے بیچنے کو روزگار کا بہتر زریعہ قرار دینا بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کو مہنگا پڑ گیا تاہمبنگلور میں طلباء نے پکوڑے بیچ کر احتجاج کیا ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق گلے میں کالج کے کارڈ ڈالے طلباء نے پکوڑے بیچنے کا کیمپ لگایا تاہم کیمپ میں دس دس روپے میں بیچنے والے پکوڑوں کے سپیشل نام رکھے گئے جنہیں طلباء بیچنے کے لئے اونچی اونچی آوازیں لگاتے ہوئے یہ کہتے تھے مودی پکوڑا ، امیت شاہ پکوڑا ، یڈی پکوڑا جب کہ ان آوازوں کو سن کر کئی راہ گیر ہنستے ہوئے گزر جاتے اور کچھ ہنسنے کے ساتھ ساتھ ان پکوڑوں کو خرید لیتے تاہم وزیر اعظم مودی کی آمد سے قبل احتجاج کرنے و لے مظاہرین کو گرفتار کر لیا گیا ۔ واضح رہے کہ نریندر مودی نے ایک حالیہ انٹرویو میں ملازمت کے مواقع پیدا کرنے پر پکوڑے بیچنے کے روزگار کا بہتر ذریعہ قرار دیا تھا اور کہا تھا کہ پکوڑے بیچنے والا دن کا دو سو روپے کما لیتا ہے ۔

loading...