اشاعت کے باوقار 30 سال

ایم آر آئی مشین میں پھنس کر نوجوان ہلاک

ایم آر آئی مشین میں پھنس کر نوجوان ہلاک

ممبئی: بھارت کے اسپتال میں ’ایم آر آئی‘ مشین میں پھنس کر نوجوان جان کی بازی ہار گیا جب کہ غفلت برتنے پر ڈاکٹر اور وارڈ بوائے کو حراست میں لے لیا گیا۔ بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ممبئی میں نائر اسپتال میں راجیش مارو نامی نوجوان اپنے رشتہ دار سے ملنے آیا جو وہاں ’ایم آر آئی‘ کروانے کے سلسلے میں پہلے سے موجود تھا، کچھ دیر بعد وارڈ بوائے کے کہنے پر نوجوان آکسیجن سلنڈر کے ہمراہ ایم آر آئی روم میں داخل ہوا تو مشین نے نوجوان کو اپنی طرف کھینچ لیا جس سے اس کی موت واقع ہو گئی۔ عینی شاہدین کے مطابق نوجوان کے ’ایم آر آئی روم‘ میں داخل ہونے سے پہلے وارڈ بوائے سے کہا گیا کہ اس کمرے میں لوہے کی چیزوں کے ساتھ جانا خطرناک ثابت ہو سکتا ہے جس پر اس نے کہا کہ ’مشین اس وقت بند پڑی ہے لہذا آپ اندر جا سکتے ہیں اور ویسے بھی یہ ہمارا روز کا کام ہے کچھ نہیں ہوتا‘، جب کہ وہاں موجود ڈاکٹر اور ٹیکنیشن کی جانب سے بھی کوئی رد عمل نہیں دیا گیا۔ اسپتال میں موجود راجیش کے رشتہ دار سولنکی کے مطابق جیسے ہی وہ کمرے میں داخل ہوا تو مشین نے پوری قوت سے اسے اپنی طرف کھینچ لیا جب کہ کچھ ہی دیر میں گیس کا سلنڈر بھی پھٹ گیا جس سے آگسیجن گیس راجیش کے پیٹ میں داخل ہو گئی۔ انہوں نے کہا کہ اسپتال انتظامیہ کی غفلت کے باعث یہ واقعہ پیش آیا لہذا ڈاکٹر اور وارڈ بوائے کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے۔ دوسری جانب پولیس نے اسپتال انتظامیہ کی غفلت اور راجیش کی موت کا مقدمہ درج کرتے ہوئے ڈاکٹر سددھانتھ شاہ اور وارڈ بوائے ویتھل چاوان کو حراست میں لے لیا۔ اسپتال کے سینئر ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ واقعے کے خلاف انکوائری کی جا رہی ہے جس کے بعد ذمہ داروں کو سزا دی جائے گی۔

loading...