اشاعت کے باوقار 30 سال

عالمی برادری نے پاکستان کے موقف کی تصدیق کر دی

عالمی برادری نے پاکستان کے موقف کی تصدیق کر دی

اسلام آباد: عالمی ادارے نے اپنی رپورٹ میں تسلیم کیا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف عالمی جنگ میں پاکستان کو مجموعی طور پر 132 ارب ڈالر کا نقصان ہوا ہے جبکہ 6000 پاکستانی اس جنگ میں شہید ہوئے ہیں۔ گزشتہ 14 سالوں سے جاری جنگ میں 62 ہزار 421 افراد کی جانیں ضائع ہوئی ہیں جن میں 1582 امریکی فوجی بھی شامل ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ اسلام آباد نے ڈونلڈ ٹرمپ کے ٹوئٹ کے بعد دہشت گردی میں پاکستان کی قربانیوں سے متعلق حقائق پر مبنی ایک رپورٹ جاری کی ہے جسے عالمی میڈیا نمایاں کوریج دے رہا ہے۔ عالمی میڈیا کے مطابق دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کا دوسرا نمبر ہے 2003ء سے 2017ء تک 62421 افراد دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہلاک ہوئے ہیں جن میں امریکی افواج کے 2357 شامل ہیں جبکہ پاکستان کے چھ ہزار فوجی جوانوں نے شہادت نوش کی ہے۔ اس جنگ میں 1582 امریکی کنٹریکٹرز کے افراد ہلاک ہوئے ہیں اس جنگ میں 1130 اتحادی افواج کے لوگ ہلاک ہوئے تھے اس جنگ میں 14200 افغانستان کے فوجی جاں بحق ہوئے ہیں عالمی ادارے کی طرف سے جاری اعداد و شمار کے مطابق پاکستان نے سب سے زیادہ نقصان اس جنگ سے اٹھایا ہے اور دیگر ممالک کی نسبت سب سے زیادہ قربانیاں دی ہیں جبکہ ملک کے اندر انتہا پسندوں کے خلاف بلا امتیاز کارروائیاں کرنے میں مصروف ہے ان حالات کے باوجود امریکی صدر پاکستان کو اپنی ناکامیوں کا ذمہ دار قرار دے رہا ہے اور پاکستان کی امداد بند کرنے کی دھمکی دے دی ہے اقوام متحدہ میں امریکی نکی ہیلی نے بھی پاکستان کو دوہرا معیار اپنانے کا طعنہ دے رہی ہے نکی ہیلی آبائی طور پر بھارتی ہیں اور پاکستان کے خلاف متعصبانہ جذبات رکھتی ہے۔

loading...