اشاعت کے باوقار 30 سال

پاکستان بھارت قومی سلامتی مشیروں کی ملاقات

پاکستان بھارت قومی سلامتی مشیروں کی ملاقات

بنکاک: بنکاک میں پاکستان اور بھارت کے قومی سلامتی مشیروں کی ملاقات ہوئی جس میں لائن آف کنٹرول اور مسئلہ کشمیر سمیت خطے کی مجموعی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق 25 دسمبر کو بھارتی جاسوس کلبھوشن سے اس کے اہل خانہ کی ملاقات کے ایک روز بعد 26 دسمبر کو پاکستان اور بھارت کے قومی سلامتی مشیروں کی تھائی لینڈ کے دارالحکومت بنکاک میں خفیہ ملاقات ہوئی۔ جنرل (ر) ناصر خان جنجوعہ اور بھارتی ہم منصب اجیت ڈوول کی ملاقات 2 گھنٹے جاری رہی۔ یہ میٹنگ پہلے سے طے شدہ تھی جس کا کلبھوشن اور اہل خانہ کی ملاقات سے کوئی تعلق نہیں تھا۔ بھارتی میڈیا نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ ملاقات میں لائن آف کنٹرول اور کشمیر کے مسئلے پر بات ہوئی جبکہ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات اور خطے کی مجموعی صورت حال بھی زیر غور آئی، ناصر جنجوعہ نے کشمیر میں بھارتی مظالم کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ ایل او سی پر آزاد کشمیر میں بلااشتعال بھارتی فائرنگ سے معصوم شہری شہید ہو رہے ہیں۔ بھارتی میڈیا کے مطابق دونوں ممالک کی قومی سلامتی کے مشیروں کے درمیان ملاقات پہلے سے طے شدہ تھی جبکہ ملاقات کے لئے تھائی لینڈ کے دارالحکومت بنکاک کا انتخاب کیا گیا۔ دوسری جانب ملکی میڈیا نے دعوی کیا ہے کہ پاک بھارت سلامتی کے مشیروں کی ملاقات 28 دسمبر کو ہوئی جو دو گھنٹے جاری رہی، مشیر سلامتی ناصر جنجوعہ 27 دسمبر کو تھائی لینڈ کیلئے روانہ ہوئے اور 28 دسمبر کو ملاقات کی، رپورٹ کے مطابق اس ملاقات سے دونوں ممالک کے درمیان بہتری کی امید کی جا سکتی ہے جس سے سرد مہری اور تناؤ کے ماحول میں کمی آئے گی۔

loading...