اشاعت کے باوقار 30 سال

گجرات میں لڑکیوں کی آپس میں شادی کا منفرد واقعہ

گجرات میں لڑکیوں کی آپس میں شادی کا منفرد واقعہ

گجرات: گجرات میں لڑکیوں کی آپس میں شادی کا انوکھا اور منفرد واقعہ پیش آیا۔ تفصیلات کے مطابق جلال پور جٹاں کی رہائشی کرن اور ثمن نے آپس میں شادی کر لی۔ ثمن اور کرن کافی عرصہ سے دوست تھیں ، ثمن کی اپنی سہیلی کرن سے دوستی محبت میں بدلی تو بات شادی تک پہنچ گئی۔ کرن نے بال کٹوائے بھیس بدلا اور دونوں نے کراچی کا رخ کر لیا۔ اہل خانہ کی شکایت پر پولیس دونوں کو گرفتار کر کے جلال پور جٹاں لے آئی۔ پولیس نے بتایا کہ دونوں کو کراچی سے گرفتار کر کے جلال پور جٹاں لایا گیا ۔ عدالت کے سامنے ثمن نے دارالامان جانے کی خواہش ظاہر کی۔ ثمن کی والدہ نے کرن پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ کرن نے ثمن کو شادی کے لیے اغوا کیا۔ ثمن نے پولیس کو بتایا کہ اس کی والدہ اس کی شادی زبردستی ایک ارسلان نامی لڑکے سے کرنا چاہتی تھیں، اس مشکل کا اظہار اس نے سہیلی کرن سے کیا۔کرن نے اپنے بیان میں کہا کہ اس نے اپنی دوست ثمن کی مدد کی اور اس کی خاطر ایک تولہ سونا تک بھی بیچ دیا۔ کرن نے کہا کہ ثمن کی والدہ نے بال کٹوانے کی آزمائش بھی لی جس پر اس نے بال بھی کٹوا دئے۔ پولیس نے واقعہ پر مزید تفتیش کر کے کارروائی کا آغاز کر رکھا ہے۔

loading...