اشاعت کے باوقار 30 سال

انتہا پسند ہندو تنظیم کی نانا پاٹیکر کو دھمکی

انتہا پسند ہندو تنظیم کی نانا پاٹیکر کو دھمکی

ممبئی : انتہا پسند ہندو تنظیم مہاراشٹرا نونرمن سینا (ایم این ایس) کے سربراہ راج ٹھاکرے نے پتھارے داروں کی حمایت کرنے پر بالی ووڈ اداکار نانا پاٹیکر کو منہ بند رکھنے کی دھمکی دے دی۔ راج ٹھاکرے کا کہنا تھا کہ 'نانا پاٹیکر کو اس معاملے پر نہیں بولنا چاہیے جس کا انہیں علم نہیں'۔واضح رہے کہ حال ہی میں بمبئے ہائی کورٹ نے ایک درخواست پر سماعت کے دوران پلوں اور ریلوے اسٹیشنز کے اطراف پتھارے لگانے پر پابندی عائد کردی تھی۔ اس حوالے سے ویرماتا جیجا بائی ٹیکنالوجیکل انسٹی ٹیوٹ (وی جے ٹی آئی) میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اداکار نانا پاٹیکر نے کہا کہ پتھارے داروں کی کوئی غلطی نہیں، وہ بس اپنا پیٹ پالنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔ نانا پاٹیکر نے کہا کہ 'ہمیں ان سے ان کا ذریعہ معاش چھیننے کا کوئی حق نہیں ہے، یہ ہماری غلطی ہے، ہم نے میونسپل کارپوریشن اور انتظامیہ سے سوال کیوں نہیں کیا کہ ان پتھارے داروں کو جگہ فراہم کی جائے، اس کے ذمہ دار ہم ہیں، پتھارے دار نہیں'۔بالی ووڈ اداکار کے اس بیان پر راج ٹھاکرے نے کہا، 'نانا پاٹیکر اس وقت خاموش تھے جب مراٹھی فلمیں ممبئی میں نہیں دکھائی جا رہی تھیں، یہ ایم این ایس ہی تھی، جس نے مداخلت کی اور ملٹی پلیکس اور تھیٹر مالکان کو مجبور کیا کہ وہ مقامی فلموں کی بھی نمائش کریں'۔ راج ٹھاکرے نے مزید کہا کہ وہ پتھارے داروں کے حوالے سے بمبئے ہائی کورٹ کے احکامات کی کاپی اپنے خط کی ایک کاپی کے ساتھ تمام پولیس اسٹیشنز، میونسپل کارپوریشن کے وارڈ آفسز اور اسٹیشن ماسٹرز کو بھیجیں گے۔ ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ اگر کوئی بھی پتھارے دار ان کی حدود میں نظر آیا تو وہ متعلقہ افسران کے خلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کر دیں گے۔

loading...