اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

چین کے ساحل کے پاس فیری ڈوب گئی

وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی نے ڈیٹا سنٹر منصوبہ بند کر دیا

وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی نے ڈیٹا سنٹر منصوبہ بند کر دیا

اسلام آباد: وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی نے قومی سلامتی کا اہم منصوبہ بغیر وجہ بتائے بند کردیا ہے، یہ منصوبہ سابقہ حکومت نے بنایا تھا تاکہ ملک کے اندر ڈیٹا سنٹر اینڈ انٹرانیٹ بنایا جائے،اس منصوبہ کی مالی امداد ورلڈ بنک نے کرنے کا وعدہ کیا تھا،سرکاری دستاویزات کے مطابق سابقہ حکومت نے اسلام آباد میں انٹرانیٹ اینڈ ڈیٹا سنٹر کے قیام کا منصوبہ بنایا تھا جس پر 935 ملین روپے اخراجات کا تخمینہ لگایا گیا تھا ابتدائی طور پر اس منصوبہ پر سابقہ حکومت کے عرصہ میں 346 ملین روپے خرچ بھی ہو گئے لیکن موجودہ حکومت نے بغیر وجہ بتائے اس منصوبہ کو بند کر دیا ہے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ منصوبہ کی بندش سے قومی سلامتی پر منفی اثرات مرتب ہوئے ہیں اب پارلیمانی کمیٹی برائے پبلک فنڈز اور احتساب منصوبہ کی بندش پر متعلقہ وزارت سے جواب طلب کرے گی۔ نواز شریف حکومت کی نا اہلی کا یہ بھی بڑا ثبوت ہے کہ قومی سلامتی بارے اہم منصوبہ بغیر وجہ بتائے بند کر دیا گیا ہے آج کل وزارت آئی ٹی کی انچارج انوشہ رحمان ہے جو وزارت پر توجہ دینے کی بجائے شریف خاندان کی کرپشن مقدمات کو ٹائم دے رہی ہے اور حلف نامہ میں مجوزہ غیر اسلامی ترمیم کرنے کی بھی ذمہ دار قرار دی جارہی ہیں اس وزارت میں اربوں روپے کے سکینڈل سامنے آئے ہیں لیکن ابھی تک کسی کرپٹ شخص کے خلاف کوئی مقدمہ قائم ہی نہیں کیا بالخصوص یو ایس ایف اور آر اینڈ ڈی فنڈز میں اربوں کے گھپلے ہیں۔

loading...