اشاعت کے باوقار 30 سال

ماڈل کی فیشن شو میں کیٹ واک کے دوران موت

ماڈل کی فیشن شو میں کیٹ واک کے دوران موت

بیجنگ: روس کی جواں سال ماڈل چین میں کیٹ واک کے دوران موت کے منہ میں چلی گئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق 14 سالہ روسی ماڈل ولادا ڈزیوبا نے گزشتہ ماہ ہی چین کی ایک ماڈلنگ ایجنسی سے تین مہینے کا معاہدہ کر کے بیجنگ میں منعقدہ فیشن شو سے اپنے بین الاقوامی کیریئر کا آغاز کیا تھا۔ متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والی روسی ماڈل نے مالی بحران کے باعث خاندان کی کفیل بن کر ماڈلنگ کی چکا چوند دنیا میں قدم رکھا تھا۔ پیسے کمانے کے غرض سے ماڈل ولادا ڈزیوبا چینی ماڈلنگ ایجنسی سے کئے گئے معاہدے کے تحت بیجنگ منتقل ہو گئی اور ایک ماہ تک وہ مسلسل کام کرتی رہی۔ ماڈل سے اس کی استطاعت سے زیادہ کام لیا جاتا رہا جس کا شکوہ اس نے اپنے اہل خانہ سے بھی کیا۔
ولادا ڈزیوبا کی والدہ نے بتایا کہ ان کی بیٹی جب بھی فون کال کرتی تو اپنی خرابی صحت کو لے کر ہمیشہ پریشان خبریں سناتی اور اپنےساتھ ہونے والے استحصال اور کام کے بوجھ پر دل برداشتہ ہو کر رونے لگتی، وہ اکثر بتاتی کہ اس سے 13 سے 14 گھنٹے تک کام لیا جا رہا ہے جس کی وجہ سے وہ اپنی نیند پوری نہیں کر پاتی اور شدید تھکن کی وجہ سے بخار میں مبتلا رہتی ہے۔ وہ فیشن شو میں ریمپ پر واک کے دوران اچانک غش کھا کر گرِ پڑی۔ ماڈل کو تشویش ناک حالت میں ایمبولینس کے ذریعے اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ 2 دن قومہ میں رہنے کے بعد زندگی کی بازی ہار گئی۔ موت کے بعد پتہ چلا کہ مذکورہ کمپنی نے ماڈل کو میڈیکل انشورنس تک نہیں دیا تھا اور معاہدے کے بر خلاف اس سے تین گھنٹے کے بجائے 14 گھنٹے تک کام لیا جارہا تھا۔ پولیس نے واقعہ کا مقدمہ درج کرتے ہوئے ابتدائی شواہد کی روشنی میں تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔

loading...