اشاعت کے باوقار 30 سال

ساتھی کھلاڑی سے ٹکرانے کے بعد گول کیپر چل بسا

ساتھی کھلاڑی سے ٹکرانے کے بعد گول کیپر چل بسا

جکا رتہ: انڈونیشیا میں فٹ بال لیگ میچ کے دوران ایک گول کیپر کی اپنی ٹیم کے ایک کھلاڑی کے ساتھ ٹکر کے بعد موت واقع ہو گئی ہے۔ 38 سالہ شوئرل ہودا کو ہسپتال پہنچایا گیا لیکن کچھ ہی دیر بعد ڈاکٹروں نے ان کی موت کی تصدیق کر دی۔ پرسیلا فٹ بال کلب کی ویب سائٹ پر جاری کردہ بیان میں گیا ہے کہ ’ڈاکٹر یودسٹرو اندری نگروہو کا کہنا ہے کہ ہودا کو سینے اور نچلے جبڑے پر چوٹ آئی تھی‘۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ’ابتدائی تجزیے‘ کے مطابق ’انھیں ممکنہ طور پر سر پر چوٹ اور گلے پر چوٹ آئی‘۔ مشرقی جاوا کے شہر لمونگن میں واقع لمونگن ہسپتال کے ڈاکٹر نگروہو کا کہنا تھا کہ ٹکرانے کے باعث ہودا کا سانس رک گیا اور دل کا دورہ پڑا۔ ان کا کہنا تھا کہ ان کی میڈیکل ٹیم نے ان کا سانس بحال کرنے کوشش کی لیکن ایک گھنٹے کی کوشش کے باوجود زندگی کے آثار محسوس نہیں ہوئے۔ جس میچ میں یہ واقعہ ہوا وہ پرسیلا اور سیمین پڈانگ کے درمیان تھا جو جاری رہا اور اس میں پرسیلا کلب نے صفر کے مقابلے میں دو گول سے کامیابی حاصل کی۔ پرسیلا فٹ بال کلب کا کہنا ہے کہ ان کے ہزاروں کی تعداد میں مداحوں نے گول کیپر کی یاد میں شمعیں روشن کرنے کی تقریب میں حصہ لیا۔ ہودا نے اس کلب کی پانچ سو سے زائد میچوں میں نمائندگی کی تھی۔ پرسیلا کلب کے انسٹا گرام اکاونٹ پر بھی لوگوں نے اپنے جذبات کا اظہار کیا۔ ایک صارف نے لکھا کہ ’پرسیلا، لمونگن اور انڈونیشین فٹ بال ٹیم کو متاثر کرنے کا شکریہ۔

loading...