اشاعت کے باوقار 30 سال

دہشت گردی کے خلاف جنگ دہرے معیار کے بغیر لڑی جانی چاہیے

دہشت گردی کے خلاف جنگ دہرے معیار کے بغیر لڑی جانی چاہیے

سینٹ پیٹربرگ: روس کے صدر ولادی میر پیوٹن کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ دہرے معیار کے بغیر لڑی جانی چاہیے۔ سینٹ پیٹربرگ میں 137ویں انٹر پارلیمنٹری یونین اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے ولادی میر پیوٹن کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کا خفیہ ایجنڈہ نہیں ہونا چاہیے اور جنگ میں کسی کے سیاسی مفاد کے لیے انتہا پسندوں کو استعمال نہیں کیا جانا چاہیے۔ روسی صدر نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ مل کر اور ایک دوسرے کا ہاتھ تھام کر لڑنا ہو گی تاہم اس میں دہرے معیار سے دہشت گردوں کو فائدہ ہوتا ہے۔ ولادی میر پیوٹن کا کہنا تھا کہ خود مختار ریاستوں کے معاملات میں سوچے سمجھے منصوبے کے تحت مداخلت سے صرف افراتفری پھیلتی ہے اور ایسی مداخلت سے مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقا کے ممالک میں عدم استحکام ہوا۔ روسی صدر نے کہا کہ ریاستوں کے معاملات میں مداخلت سے کشیدگی میں اضافہ اور دہشت گردی کے خطرے میں اضافہ ہوا ہے۔

loading...