اشاعت کے باوقار 30 سال

اداکارہ شمیم آرا کا عبرت ناک انتقام

 اداکارہ شمیم آرا کا عبرت ناک انتقام

لاہور: سینئر ہدایت کار و فلم ساز ڈبلیو زیڈ احمد کے صاحبزادے ہدایت کار فرید احمد اور اداکارہ شمیم آرا ایک دوسرے کے عشق میں گرفتار تھے اور آپس میں شادی کرنا چاہتے تھے جب کہ ڈبلیو زیڈ احمد نہیں چاہتے تھے کہ ان کے صاحبزادے کی شادی شمیم آرا سے ہو ۔ بڑی مشکل سے انہوں نے اس شادی کی اجازت دے دی۔ مقررہ وقت پر شمیم آرا اپنے گھر میں دلہن بن کر بارات کا انتظار کرنے لگی ۔اس موقع پر تمام پریس شمیم آرا کی طرف سے بطور مہمان موجود تھا۔ لیکن بارات نہ آئی۔ جب فرید احمد کے گھر جا کر معلوم کیا تو پتہ چلا کہ ڈبلیو زیڈ احمد نے اپنے بیٹے کو شمیم آرا سے شادی نہ کرنے پر راضی کر لیا ہے۔ یہ خبر سن کر تو شمیم آرا کے گھر صف ماتم بچھ گئی۔ شمیم آرا کی بڑی سبکی ہوئی۔ اسے بڑا صدمہ پہنچا ،ان کے لیے فرید احمد کی بے وفائی نا قابل برداشت تھی۔ کچھ عرصہ بعد فرید احمد کی شادی ٹی وی ایکٹرس ثمینہ احمد سے کر دی گئی ۔ یہ خبر شمیم آرا کے لئے کسی بم دھماکہ کی طرح تھی۔
کہتے ہیں کہ وقت سب سے بڑا مرہم ہے۔ کچھ عرصہ بعد شمیم آرا کی ملاقات سندھ کے وڈیرے سردار رند سے ہو گئی اور آہستہ آہستہ یہ ملاقاتیں محبت اور پھر شادی میں تبدیل ہو گئیں۔ سردار رند نے شمیم آرا کا بہت خیال رکھا۔ اتنا کہ وہ اپنا پہلا غم بھول گئی۔ اس دوران سردار رند ایک ٹریفک حادثے میں وفات پاگئے تو شمیم ایک مرتبہ پھر اکیلی ہو گئی۔ لیکن یہ غم قدرتی تھا۔ قدرت کے ہاتھوں انسان بے بس ہے۔ کچھ عرصہ بعد ممتاز بزنس مین ایگفا کلر فلم کے مالک کریم مجید سے شمیم آرا نے شادی کر لی۔ اور ایک سال بعد شمیم آرا ایک بیٹے کی ماں بن گئیں۔ لیکن یہ شادی بھی میاں بیوی کے جھگڑوں کی نذر ہو گئی اور کریم مجید نے شمیم آرا کو طلاق دے دی۔ کچھ عرصہ بعد شمیم آرا کی فرید احمد سے ملاقات ہو گئی۔ خوب گلے شکوے ہوئے ۔فرید احمد اپنی مجبوریاں اور اپنے باپ کے جبر کے قصے بیان کرتا رہا۔ اس نے کسی نہ کسی طرح شمیم آرا کو راضی کر لیا اور ایک مرتبہ پھر دونوں ایک دوسرے کا دم بھرنے لگے۔ ملاقاتیں ہونے لگیں ۔فرید احمد نے شمیم آرا کو شادی کی پشکش کر دی۔ شمیم آرا نے پہلی شرط یہ رکھی کہ اپنی بیوی ثمینہ احمد کو طلاق دو۔ حالانکہ اس وقت فرید احمد کے دو بچے ہو چکے تھے۔ لیکن عشق کا بھوت ایسا سوار ہوا کہ وہ کفارہ ادا کرنے کے لئے اس پر بھی راضی ہو گیا اور اپنی بیوی کو طلاق دے دی۔ اور شمیم آرا سے شادی رچا لی۔ شمیم آرا نے شادی سے چوتھے روز ایک پُرہجوم پریس کانفرنس بلائی اور اس میں اپنے عاشق شوہر فرید احمد سے طلاق کا مطالبہ کرتے ہوئے بتایا ” فرید احمد تونامرد ہے بیوی کے قابل نہیں اس لیے میں فوراً طلاق کا مطالبہ کرتی ہوں“ فرید احمد بھی اس موقع پر موجود تھا۔ یہ پریس کانفرنس اس کے لیے موت کا پیغام تھی ۔اس کے سر پر قیامت ٹوٹ گی۔ یہ الزام اس کے لیے بڑا شرمناک اور ذلت آمیز تھا حالانکہ وہ اس سے قبل ثمینہ احمد کے دو بچوں کا باپ تھا۔ لیکن اسے اور تمام صحافیوں کو سمجھ آ گئی کہ شمیم آرا نے فرید احمد سے ماضی میں شادی کا وعدہ کرنے کے باوجود برات نہ لانے کا بدلا لے لیا ہے۔ فرید احمد نے شمیم آرا کو طلاق دے دی ۔ اور وہ اس صدمہ سے ایسا نڈھال ہوا کہ کچھ ہی عرصہ میں خالق حقیقی سے جا ملا جب کہ اس کے والد ڈبلیو زیڈ احمد کو اپنے جبر اور مخالفت کی سزا اپنے جواں سال بیٹے کا گھر ٹوٹنے اور پھر موت کی شکل میں برداشت کرنا پڑی۔ اس کے کچھ عرصہ بعد شمیم آرا نے اپنے چاہنے والے شخص معروف فلمی مصنف دبیر الحسن سے شادی کر لی جو اس کے انتقال تک رہی۔

loading...