اشاعت کے باوقار 30 سال

ممتاز ماہر قانون اور انسانی حقوق کی علمبردار عاصمہ جہانگیر سپرد خاک

ممتاز ماہر قانون اور انسانی حقوق کی علمبردار عاصمہ جہانگیر سپرد خاک

لاہور: پاکستان کی ممتاز ماہر قانون اور انسانی حقوق کی علمبردار عاصمہ جہانگیر کو ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں سپرد خاک کر دیا گیا عاصمہ جہانگیر حرکت قلب بند ہونے کے باعث دو روز انتقال کر گئیں تھیں مرحومہ کی نماز جنازہ جو گزشتہ سہ پہر تین بجے قذافی سٹیڈیم لاہور سے ملحقہ ایل سی سی اے گراؤنڈ میں ادا کی گئی میں ہزاروں افراد جن میں خواتین کی کثیر تعداد بھی شامل تھی نے شرکت کی جبکہ اس موقع پر لاہور پولیس نے سیکورٹی کے سخت انتظامات کر رکھے تھے پولیس اہلکاروں کی بھاری نفری نے ایل سی سی گراؤنڈ کو چاروں اطراف سے اپنے حصار میں لے رکھا تھا جبکہ نماز جنازہ میں شرکت کے لئے آنے والے لوگوں کو گراؤنڈ کے داخلی راستوں پر لگائے گئے واک تھرو گیٹ سے گزر کر نماز جنازہ میں شرکت کے لئے بھیجا جاتا رہا مرحومہ عاصمہ جہانگیر کی نماز جنازہ مذہبی سکالر مولانا مودودی مرحوم کے صاحبزادے حیدر مودودی نے پڑھائی نماز جنازہ میں انسانی حقوق کی تنظیموں کے رہنماؤں، سابق و موجودہ وفاقی و صوبائی وزراء، اراکین اسمبلی ملک بھر کی مختلف وکلاء بارز کے عہدیداروں سمیت عوام کی کثیر تعداد کے ساتھ ساتھ چیئرمین سینٹ رضا ربانی، سینیٹر چوہدری اعتزاز احسن، سابق وزیر پرویز رشید، میاں افتخار، شیخ انوار الحق، سابق گورنر شاہد حامد، اٹارنی جنرل اشتر اوصاف، قاسم منیر چوہدری، پولیس افسران امین وینس، حیدر اشرف، اعظم نذیر تارڑ، حفیظ الرحمان چوہدری، کامران مرتضیٰ، غلام شبیر شر سمیت صحافیوں، اینکر پرسن، تجزیہ کاروں، حاضر سروس و ریٹائرڈ ججوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی نماز جنازہ سے قبل مرحومہ عاصمہ جہانگیر کی میت کو ایک نجی ہسپتال کے سرد خانے میں رکھا گیا جہاں سے ان کی میت کو ان کے گھر واقع گلبرگ منتقل کر دیا گیا مرحومہ کے لواحقین سے اظہار تعزیت کے لئے تمام دن تعزیت کے لئے آنے والوں کا تانتا بندھا رہا دریں اثناء تھانہ گلبرگ پولیس نے عاصمہ جہانگیر کی رہائش گاہ کے گرد و نواح میں واقع سرکاری و نجی تعلیمی اداروں کو صبح ہی سے بند کر رکھا تھا اس حوالے سے پولیس کا کہنا تھا کہ نماز جنازہ میں وی وی آئی پی موومنٹ کے پیش نظر ٹریفک کے بہاؤ کو برقرار رکھنے اور سیکورٹی نقطہ نگاہ کے حوالے سے ان سکولوں کو بند کرنا پڑا عاصمہ جہانگیر مرحومہ کی رسم قل آج سہ پہر تین بجے ان کی رہائش گاہ واقع گلبرگ میں ادا کی جائے گی جبکہ شام چار بجے دعا کی جائے گی۔

loading...