اشاعت کے باوقار 30 سال

صلاح الدین نیر کے نام ’’جشن نیر‘‘ منایا جائے گا

 صلاح الدین نیر کے نام ’’جشن نیر‘‘ منایا جائے گا

حیدر آباد: حیدر آباد کے سب سے بزرگ شاعر ‘ادیب ‘مصنف اور ایڈیٹر ماہنامہ خوشبو کا سفر کی ادبی و صحافتی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے درگاہ حضرت پتھر والے صاحبؒ کے 151ویں عرس کی مناسبت سے حکومت ہند کی جانب سے ڈاک ٹکٹ جاری کروایا گیا۔ صلاح الدین نیر حیدر آباد کے بزرگ شاعر ہیں اور کئی ادبی انجمنوں کے بانی ہیں اور آپ کی اب تک 114 کتابیں منظر عام پر آ کر مقبول ہو چکی ہیں۔ آپ کا رسالہ خوشبو کا سفر اکیس سال سے پابندی سے شائع ہو رہا ہے۔ گلبرگہ یونیورسٹی سے آپ پر ایم فل اور جامعہ عثمانیہ سے آپ پر پی ایچ ڈی بھی ہو چکی ہے۔ آپ کے نام ڈاک ٹکٹ جاری ہونے پر آل انڈیا اردو ماس سوسائٹی فار پیس کے صدر ڈاکٹر مختار احمد فروین اور محسن خان نے ان کے مکان ملے پلی پہنچ کر ان کی گلپوشی کی اور خوشی کا اظہار کیا۔ واضح رہے کہ صلاح الدین نیر کو تلنگانہ کے قیام کے بعد 2014 میں حکومت تلنگانہ کی طرف سے ریاستی ایوارڈ اور ایک لاکھ روپے سے نوازا گیا تھا۔ متحدہ آندھرا پردیش میں آپ کو اردو اکیڈیمی کی جانب سے کارنامہ حیات ایوارڈ دیا گیا۔ آپ کی تقریباً ہر کتاب پر اردو اکیڈیمی کی جانب سے ایوارڈ دیا گیا ہے۔ بہار‘ اترپردیش اور بنگال اکیڈیمی کی جانب سے کتابوں پر بھی ایوارڈ دیا گیا ہے۔ ہندوستان کی مختلف ایسوسی ایشنوں کی جانب سے آپ کو کئی ایوارڈز سے نوازا جا چکا ہے۔ پانچ صدر جمہوریہ ذاکرحسین سے لے کر سنجیوا ریڈی کے سامنے کلام سنانے کا آپ کو شرف حاصل ہو چکا ہے۔ اس موقع پر سوسائٹی کے صدر مختار احمد فروین نے کہا کہ شاندار پیمانے پر جشن نیر منانے کی تیاری کی جا رہی ہے اور جلد ہی تاریخ و مقام کا اعلان کیا جائے گا اور انہیں انمول رتن ایوارڈ سے سرفراز کیا جائے گا۔ عرس کی مناسبت سے اس موقع پر 70 بڑی شخصیتوں بشمول سردار سلیم‘ پروفیسر مجید بیدار‘نسیم الدین فریس‘ عارف پاشاہ قادری کے نام کے ڈاک ٹکٹ جاری کئے گئے۔

loading...