اشاعت کے باوقار 30 سال

چوہدری نثار علی خان کو پارٹی سے نکال دیا جائے

 چوہدری نثار علی خان کو پارٹی سے نکال دیا جائے

اسلام آباد: سابق وزیر اطلاعات پرویز رشید نے کہا ہے کہ چوہدری نثار ڈان لیکس کے معاملے پر کسی کی خوشنودی کے لیے مجھے پارٹی سے نکالنا چاہتے تھے، پارٹی چوہدری نثار کے بارے میں فیصلہ کرے، میرا ووٹ انھیں نکالنے کے حق میں ہو گا۔ ایک ٹی وی انٹرویو میں سابق وزیر اطلاعات سینیٹر پرویز رشید نے کہا کہ کچھ لوگ انھیں وفاقی کابینہ سے نکلوانا چاہتے تھے، چوہدری نثار کو ان کی خوشنودی حاصل کرنے کی جلدی تھی۔ انھوں نے سارے کام کو اس طرح ترتیب دیا کہ ان کی خوشنودی حاصل کر لی۔ وہ ادارے کی بات نہیں کرتے بلکہ فوج کا ایک گروہ تھا جس کی خوشنودی انہوں نے میری برطرفی سے حاصل کرنے کی کوشش کی۔ پرویز رشید کا کہنا تھا کہ چوہدری نثار کو پارٹی میں نہیں ہونا چاہیے اور قیادت کو اس بارے میں فیصلہ کرنا چاہیے۔ اگر مجھ سے پوچھیں گے تو میں ضرور کہوں گا کہ چوہدری نثار کے بارے میں فیصلہ کرنا چاہیے۔ جب پارٹی امتحان میں تھی تو انھوں نے اس کی پالیسیوں کے خلاف گمراہ کن بیانات دیے۔ زینب قتل کیس پر پرویز رشید نے کہا کہ پنجاب میں بچوں سے زیادتی کے واقعات حکومت کی نا اہلی نہیں، قصور میں زینب کے قتل پر افسوس ہے، قصور میں بچوں سے زیادتی کرنے والاجلد گرفتار ہو گا۔ نواز شریف کی زینب کے گھر نہ جانے کی وجہ اس ایشو پر سیاست ہونا ہے۔ اگر وہ قصور جاتے تو مخالفین کہتے سیاست ہو رہی ہے۔

loading...