اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

کیلی فورنیا میں طوفانی بارشیں، نشیبی علاقے زیر آب آ گئے

کیلی فورنیا میں طوفانی بارشیں، نشیبی علاقے زیر آب آ گئے

واشنگٹن: امریکی ریاست کیلی فورنیا میں طوفانی بارشوں کے نتیجے میں نشیبی علاقے زیر آب آنے اور مختلف حادثات کے نتیجے میں 13 افراد ہلاک ہو گئے جب کہ امریکہ میں خراب موسم کے باعث ہلاکتوں کی تعداد 35 ہو گئی ہے۔ واشنگٹن ڈی سی، نیویارک سٹی، بالٹی مور، فلاڈیلفیا اور ہوسٹن سمیت کئی شہروں میں 6500 سے زائد پروازیں تاخیر کا شکار ہوئی ہیں جب کہ 750 پروازیں منسوخ کی گئی ہیں۔ محکمہ موسمیات نے رواں ہفتے کے آخر میں مغربی اور شمال مشرقی ریاستوں میں نئے سمندری طوفان کی وارننگ جاری کر دی ہے اور شدید بارشوں کا امکان بھی بتایا جاتا ہے۔ کیلی فورنیا میں طوفانی بارشوں کے باعث نشیبی علاقوں میں سیلابی صورت حال پیدا ہو گئی اور کئی علاقوں میں مٹی کے تودے بھی گرے۔ کیلی فورنیا میں حکام نے پہلے ہی 30 ہزار افراد کو سیلابی خطرے کے پیش نظر محفوظ مقامات پر منتقل ہونے کی ہدایات جاری کر رکھی ہیں۔ خراب موسم کے باعث واشنگٹن ڈی سی، بالٹی مور، فلاڈیلفیا، نیویارک سٹی اور ہوسٹن جیسے اہم شہروں کے ایئر پورٹس پر پروازوں کا نظام بری طرح متاثر ہوا۔ کل 6500 سے زائد پروازیں تاخیر کا شکار جب کہ 750 پروازیں منسوخ کرنا پڑیں۔ گذشتہ ہفتے ریاست نیویارک کے وسطی شہر سیراکیوز میں لگاتار 66 گھنٹوں تک 20 انچ برفباری ریکارڈ کی گئی جب کہ درجہ حرارت منفی آٹھ سینٹی گریڈ تک گر گیا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق اس شہر میں درجہ حرارت کا 120 سال کا ریکارڈ ٹوٹ گیا جب کہ امریکی محکمہ موسمیات نے خبردار کیا ہے کہ اس ہفتے کے آخر میں نئے سمندری احکامات ہیں۔ طوفان کے باعث وسط مغربی ریاستوں ایلی نائے، انڈیانا، آئیوا، کینس، مشی گن، منی سوٹا، میوری، نبراسکا، سماسی اور جنوبی ڈاکوٹا، اوھائیو، ونسکونسن کے علاوہ شمال مشرقی ریاستوں مین، نیویارک، نیو جرسی، ورمون، میسی چوسٹس، کینٹکیٹ، نیوہمپشائر اور پنسلوینیا میں مزید برفباری اور بارشیں ہوں گی اور نشیبی ریاستوں اور شہروں میں سیلابی صورت حال پیدا ہونے کا خطرہ ہے۔ سخت سرد موسم میں جھیلیں جم جانے کے باعث ان میں رہنے والے مگرمچھ بھی مشکلات کا شکار ہیں۔ کئی مقامات پر برف میں مگرمچھوں کو پھنس جانے کے بعد انہیں ریسکیو کیا گیا۔

loading...