اشاعت کے باوقار 30 سال

حادثے کا شکار ایرانی تیل بردار جہاز میں لگی آگ نہ بجھائی جا سکی

حادثے کا شکار ایرانی تیل بردار جہاز میں لگی آگ نہ بجھائی جا سکی

سیول: چین میں حادثے کا شکار ایرانی تیل بردار جہاز میں لگی آگ بدستور بھڑک رہی ہے جو ایک ماہ تک بھی شاید بجھائی نہ جا سکے۔جنوی کوریا کے حکام نے غیر ملکی خبر رساں ادارے کو دیے گئے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مشرقی بحیرہ چین میں چینی مال بردار جہاز سے تصادم میں تباہ ہونے والے ایرانی تیل بردار جہاز میں بدستور آگ بھڑک رہی ہے جو شاید آئندہ ایک ماہ تک بھی بجھائی نہ جا سکے۔ تیز ہواؤں، زہریلے دھویں، گیس کی وجہ سے تیل بردار جہاز کے دھماکے سے پھٹنے کا خطرہ ہے جس کی وجہ سے آگ پر قابو پانا مشکل ہو رہا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ امدادی کارکنوں نے سمندر سے ایک لاش برآمد کر لی ہے جبکہ عملے کے باقی 31 ملاحوں کی لاشوں کی تلاش جاری ہے۔ واضح رہے کہ پاناما میں رجسٹرڈ ایرانی تیل بردار جہاز ایک لاکھ چھتیس ہزار ٹن خام تیل لے کر جنوبی کوریا جا رہا تھا کہ اس دوران مشرقی چین کے ساحل سمندر سے 257 کلومیٹر دور چین کے مال بردار جہاز کرسٹل سے ٹکرانے کے نتیجے میں مکمل تباہ ہو گیا۔

loading...