اشاعت کے باوقار 30 سال

امریکہ دشنام طرازی اور دھمکی کی بجائے پاکستان سے سبق سیکھے

امریکہ دشنام طرازی اور دھمکی کی بجائے پاکستان سے سبق سیکھے

اسلام آباد: وزیر دفاع خرم دستگیر نے کہا ہے کہ پاکستان امریکہ تعلقات دو ٹریکس پر ہیں پاکستان افغانستان میں امن و امان کے قیام کے لئے امریکہ کے ساتھ بیٹھنے کے لئے تیار ہے۔ امریکہ دشنام طرازی اور دھمکی کی بجائے پاکستان سے سبق سیکھے تعاون کے بغیر مثبت نتائج برآمد نہیں ہوں گے۔منگل کے روز نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے وزیر دفاع خرم دستگیر نے کہا کہ پاکستان کا ہدف امریکی صدر کے بیان کے جواب میں بیان دینا نہیں پاکستان کا ایک ہدف اپنی مٹی کا بھرپور دفاع جب کہ دوسرا افغانستان کے اندرونی مفاہمتی عمل کی کوشش ہے۔ پاکستان ان دو اہداف کو آگے لے کر چل رہا ہے۔ پاکستان کے امریکہ کے ساتھ تعلقات دو ٹریکس پر ہیں۔ امریکی وزیر خارجہ اور وزیر دفاع پاکستان آئے اس وقت تعمیری گفتگو ہوئی جب کہ دوسری طرف امریکی صدر کی گفتگو، امریکی نائب صدر اور ان کے وزراء کی گفتگو میں تضاد ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اپنا دفاع کرتے ہوئے افغانستان میں امن و امان کی کوشش جاری رکھے گا۔ امریکہ افغانستان میں اپنے اہداف حاصل کرنے میں مکمل طور پر ناکام رہا اور افغانستان ان کے قابو سے باہر ہے امریکہ کو دشنام طرازی کی بجائے پاکستان سے سبق سیکھنا چاہیے۔ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف کامیاب ترین جنگ لڑی ہے پاکستان کے ساتھ تعاون سے چلیں گے تو مثبت نتائج آئیں گے۔ دشنام طرازی اور دھمکیاں کسی کے مفاد میں نہیں ہوں گے۔ وزیر دفاع کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کا مقصد افغان امن ہے جس کے لئے امریکہ کے ساتھ بیٹھنے کے لئے تیار ہیں۔ امریکی الزامات پر پاکستان امریکہ کو بہت دفعہ پیشکش کر چکا ہے اگر امریکہ کے پاس دہشت گردوں کی موجودگی کی مستند اطلاعات موجود ہیں تو پاکستان کو بتائے پاکستانی سیکیوریٹی فورسز فوری کارروائی کریں گی سیکورٹی فورسز نے کامیاب ترین جنگ دہشت گردی کے خلاف جیتی ہے آج کا پاکستان آپریشن ضرب عضب اور آپریشن ردالفساد کے بعد کا پاکستان ہے۔ 27 لاکھ افغانی پاکستان میں موجود ہیں جو پاکستان کے لئے ایک چیلنج ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کے بیان کے بعد امریکی سفیر کو باہمی مشاورت سے طلب کیا۔ امریکی سفیر نے کہا کہ امریکہ کی پاکستان سے متعلق پالیسی ابھی یا کبھی تبدیل نہیں ہوتی۔ پاکستان امریکہ کو آگاہ کرچکا ہے۔بارڈر پر در اندازی روکنے کے لئے افغان سرحد پر باڑ لگا رہے ہیں افغنستان سے پاکستان کی سرحد پر مستقل دہشت گردی ہو رہی ہے۔

loading...