اشاعت کے باوقار 30 سال

شام میں روس کے دو مستقل فوجی اڈے قائم کرنے کی منظوری

شام میں روس کے دو مستقل فوجی اڈے قائم کرنے کی منظوری

ماسکو: روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاروف کا کہنا ہے کہ شام میں دو فوجی اڈے مستقل بنیادوں پر قائم کئے جائیں گے جس کی منظوری صدر پیوٹن دے چکے ہیں۔غیرملکی خبرایجنسی کے مطابق روسی وزیر وزیر خارجہ سرگئی لاروف نے کہا ہے کہ روس نے شام میں دو فوجی اڈّوں طرطوس اور حمیمیم میں اپنے فوجیوں کی مستقل موجودگی کی تیاریاں شروع کر دی ہیں۔ روسی چیف آف اسٹاف نے گزشتہ ہفتے ان دونوں فوجی اڈوں پر اعتماد کا اظہار کیا تھا۔ اب ہم نے انہیں اپنے مستقل فوجی اڈے بنانے کا آغاز کر دیا ہے اور اس کی منظوری روسی صدر ولادیمیرپیوٹن پہلے ہی دے چکے ہیں۔شام میں طرطوس کے اڈے پر بیڑے کی کمک کے مرکز کی توسیع کے حوالے سے روس اور شامی حکومت کے درمیان معاہدے کی توثیق ہوچکی ہے، اس معاہدے کے تحت طرطوس کی بندرگاہ پر ایک وقت میں روس کے 11 جنگی بحری جہازوں کی موجودگی کی اجازت ہو گی جن میں ایٹمی توانائی سے کام کرنے والے جہاز بھی شامل ہیں۔واضح رہے کہ روس 2015 ء4 سے شام میں جاری آپریشن کا حصہ ہے جس نے گزشتہ دنوں شام سے جزوی طور پر انخلاء4 کا اعلان کیا تھا۔

loading...