اشاعت کے باوقار 30 سال

فیصل آباد جیل سے رشوت اور جعلی کاغذات پر قیدیوں کی رہائی

فیصل آباد جیل سے رشوت اور جعلی کاغذات پر قیدیوں کی رہائی

فیصل آباد: فیصل آباد کی سینٹرل جیل سے سنگین مقدمات میں ملوث قیدیوں کی رشوت اور جعلی کاغذات پر رہائی کا انکشاف ہوا ہے۔ رہائی میں جیل سپرنٹنڈنٹ اور عملہ ملوث ہے۔ ہوم ڈیپارٹمنٹ نے تفصیلی انکوائری کا حکم جاری کر دیا۔ سینٹرل جیل سے نصر اللہ نامی منشیات کے قیدی کی قبل از وقت رہائی کی تحقیقات کے دوران انکشاف ہوا ہے کہ جیل سے کئی قیدیوں کو مبینہ رشوت ، ریکارڈ میں ہیر پھیر اور جعلی کاغذات بنا کر رہا کیا گیا ہے۔ قیدی نصر اللہ کی رہائی کے لئے 15 لاکھ روپے رشوت لی گئی اور جعلی تعلیمی اسناد بنا کر سزا معافی کے قانون کا فائدہ اٹھایا گیا۔ ہوم ڈیپارٹمنٹ نے ڈی آئی جی پریزنز لاہور ریجن مبشر احمد کو انکوائری آفیسر مقرر کر کے دو ماہ میں رپورٹ طلب کرلی ہے۔ جیل ذرائع کے مطابق مزید 6 ایسے قیدیوں کا معاملہ بھی سامنے آیا ہے جنہیں قبل از وقت رہا کیا گیا ہے۔

loading...