اشاعت کے باوقار 30 سال

بھارت میں ایک عجیب الخلقت بچے کی پیدائش

بھارت میں ایک عجیب الخلقت بچے کی پیدائش

نئی دلی: بھارت میں ایک خاتون کے ہاں ایک ایسے عجیب الخلقت بچے کی پیدائش ہوئی کہ ڈاکٹروں نے بھی اپنی زندگی میں اس طرح کا واقعہ پہلے کبھی نہیں دیکھا تھا۔ دی انڈیپینڈنٹ کے مطابق نوجوان خاتون مشکورہ بی بی کے ہاں جنم لینے والے بچے کی ٹانگیں اوپر سے لے کر پیروں کی ایڑیوں تک آپس میں جڑی ہوئی تھیں، جس سے وہ افسانوی مخلوق جل پری جیسا نظر آتا تھا۔ رانوں کے آپس میں جڑے ہونے کی وجہ سے بچے کی جنس کی تصدیق کرنا بھی ممکن نہ تھا۔ کلکتہ کے چتا رنجن سیوا سادن ہسپتال میں جنم لینے والا یہ بچہ محض چار گھنٹے بعد ہی دنیا سے رخصت ہو گیا۔ ڈاکٹر سدیپ ساہا کا کہنا تھا کہ غربت کے باعث بچے کے والدین حمل کے دوران الٹرا ساؤنڈ نہیں کروا سکے تھے ورنہ پہلے ہی بچے کے جسم میں خرابی کا علم ہو جاتا اور بر وقت اسقاط حمل کیا جا سکتا تھا۔ ڈاکٹروں کے مطابق یہ بچہ ’سائرینو میلیا‘ نامی جسمانی بگاڑ کا شکار تھا، جسے دیگر الفاظ میں ’مرمیڈ سنڈروم‘ بھی کہا جاتا ہے۔ اول تو اس طرح کے کسی بچے کی پیدائش ہی انتہائی کمیاب واقعہ ہے، اور اگر اس بگاڑ کے ساتھ کوئی بچہ پیدا ہو بھی تو اس کا زندہ رہنا ممکن نہیں ہوتا۔

loading...