اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

صدام حسین کو گرفتار کر لیا گیا

نواز شریف کی نااہلی کے بعد حکومت کا پہیہ جام ہو چکا ہے

نواز شریف کی نااہلی کے بعد حکومت کا پہیہ جام ہو چکا ہے

کوئٹہ: پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری جنرل جہانگیر ترین نے کہا ہے کہ محمود خان اچکزئی کی بیان سے واضح ہو چکا ہے کہ وہ پشتونوں کے نہیں بلکہ نواز شریف کے ساتھی ہے ان کے اس بیان سے ملک بھر میں بسنے والے پشتون قوم کی دل آزاری ہوئی ہے نواز شریف کی نا اہلی ثابت ہونے کے بعد حکومت کا پہیہ جام ہو گیا ہے پچھلے جلسہ سے ثابت ہوا کہ بلوچستان کے عوام نے مسلم لیگ (ن) اور پشتونخوا میپ کو مسترد کر دیا ہے 2018 کے الیکشن میں پاکستان تحریک انصاف بھرپور کامیابی حاصل کرتے ہوئے خیبر پختونخوا سے 60 فیصد نشستیں حاصل کریں گی عمران خان نے ملک سے پیسے کما کر پاکستان لائیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے کوئٹہ ائیر پورٹ پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا اس موقع پر بلوچستان کے صوبائی صدر سردار یار محمد رند، میر اسماعیل لہڑی، خادم حسین وردگ اور دیگر پارٹی کارکن بھی تھے انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی نا اہلی ثابت ہونے کے بعد حکومت کا پہیہ جام ہو چکا ہے کرپشن کے خلاف ہماری تحریک رنگ لے آئی ہم نے منی لانڈرنگ نہیں کی ہم نے جو پیسہ باہر بھیجے ہیں وہ بینکوں کے ذریعے بھجوائے ہیں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے ملک سے باہر پیسہ کما کر پاکستان میں لے آئے ہیں اور پاکستان آ کر یہاں منی ٹرائل دی ہے جبکہ یہ لوگ کرپشن کر کے پیسے باہر بھجوا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ آنے والے 2018 کے الیکشن میں پاکستان تحریک انصاف بھر پور کامیابی حاصل کرتے ہوئے خیبر پختونخوا سے 60 فیصد نشستیں حاصل کریں گے ہم خیبر پختونخوا میں کلین سوپ کریں گے وہاں کے عوام پی ٹی آئی سے بہت خوش ہے ہم نے وہاں پولیس، تعلیم اور دیگر اداروں کو بہتر بنایا انہوں نے کہا کہ ماڈل ٹاؤن واقعہ کا ذمہ دار شہباز شریف اور رانا ثناء اللہ ہے سانحہ کے حوالے سے ہمارے خدشات تھے کو عدالت نے صحیح ثابت کیا عدالت نے بھی وہی خدشات ظاہر کئے جو ہم نے کئے تھے شہباز شریف اور رانا ثناء اللہ اس رپورٹ کے بعد اخلاقی طور پر خود مستعفی ہونا چاہئے کیونکہ شہباز شریف نے کہا تھا کہ اگر کیس میں میرا نام ہوا تو میں خود استعفیٰ دوں گا انہوں نے کہا کہ میں حیران ہوگیا ہوں محمود خان اچکزئی کی بات سن کر اس کی بیان سے واضح ہو چکا ہے کہ وہ پشتونوں کے نہیں بلکہ نوازشریف کے ساتھی ہے ان کے اس بیان سے ملک بھر میں بسنے والے پشتون قوم کی دل آزاری ہوئی ہے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگر ووٹ چاہئے تو عوام کے پاس جانا چاہئے اور اگر انصاف چاہئے تو عدالتوں کا رخ کرنا ہو گا اب کل کو کوئی چور ڈاکو چوری کرنے کے بعد الیکشن لڑے گا اور کہے گا کہ میں چور نہیں ہوں کیونکہ مجھے عوام نے منتخب کیا ہے عدالتیں انصاف کے لئے ہیں اور ووٹر الیکشن جیتنے کے لئے ہوتے ہیں اس موقع پر سردار یار محمد رند نے کہا کہ جس اسٹیڈیم میں ہم نے جلسہ کیا اسی اسٹیڈیم میں پشتونخوامیپ اور مسلم لیگ ن نے مل کر جلسہ کیا 40 ایم پی ایز اور گورنمنٹ میں ہونے کے باوجود ان کا جلسہ ناکام ہو چکا ہے اس سے بات ثابت ہوتی ہے کہ بلوچستان کے پشتونوں نے ان کو مسترد کر دیا۔

loading...