اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

صدام حسین کو گرفتار کر لیا گیا

کبھی اپنے کام کی تعداد بڑھانے کا شوق نہیں رہا

کبھی اپنے کام کی تعداد بڑھانے کا شوق نہیں رہا

لاہور: معروف اداکارہ و ماڈل مہوش حیات نے کہا ہے کہ بطور فنکار اگر میں چاہوں تو ہر آفر کو قبول کرتے ہوئے ہر فلم اور ڈرامے کا حصہ بن سکتی ہوں لیکن مجھے کبھی بھی اپنے کام کی تعداد بڑھانے کا شوق نہیں رہا۔ ایک انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ ایک اچھی کہانی کی ڈیمانڈ کے لیے اگر سرمایہ لگایا جائے تو بری بات نہیں، وگرنہ کم بجٹ میں بھی اچھی فلم بن سکتی ہے۔ ہالی ووڈ اور بالی ووڈ میں ایسی بے شمار مثالیں موجود ہیں۔ فلم کی کہانی، لوکیشنز اور میوزک کے علاوہ ڈائیلاگ کا جاندار ہونا اب بے حد ضروری ہو چکا ہے۔ اداکارہ نے کہا کہ میں کسی اور کی نہیں بلکہ اپنی بات کرتی ہوں کہ جب بھی مجھے کوئی پروجیکٹ آفر ہوتی ہے تو میں سب سے پہلے فلم کی کہانی سنتی ہوں اور اپنے کردار کا مطالعہ کرتی ہوں۔ اس کے بعد میں یہ فیصلہ کرتی ہوں کہ مجھے اس پروجیکٹ کا حصہ بننا ہے یا نہیں۔ بطور فنکار اگر میں چاہوں تو ہر آفر کو قبول کرتے ہوئے ہر فلم اور ڈرامے کا حصہ بن سکتی ہوں لیکن مجھے کبھی بھی اپنے کام کی تعداد بڑھانے کا شوق نہیں رہا۔ مہوش حیات نے کہا کہ میں سمجھتی ہوں کہ تعداد جتنی بھی ہو بس معیاری کام کیا جائے، تاکہ لوگ اسے یاد رکھیں۔ یہی وجہ ہے کہ میں صرف منفرد کرداروں اور اچھوتے موضوعات کی فلموں میں دکھائی دیتی ہوں۔ بلاشبہ اس وقت پاکستان میں بے شمار فلمیں پروڈیوس ہو رہی ہیں لیکن میرا فوکس صرف منفرد کام پر ہی رہتا ہے جس کا مقصد ایک ہی ہے کہ ہم اچھے کام کی بدولت انٹرنیشنل مارکیٹ تک رسائی پا سکیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت اگر دیکھا جائے تو تمام فنکاروں اور تکنیک کاروں کا یہی ٹارگٹ ہونا چاہیے۔

loading...