اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

صدام حسین کو گرفتار کر لیا گیا

بھارتی جیل میں کم عمر پاکستانی بچے کی قید کا انکشاف

بھارتی جیل میں کم عمر پاکستانی بچے کی قید کا انکشاف

نئی دہلی: بھارتی جیل میں کم عمر پاکستانی بچے کی قید کا انکشاف، بھارت کی امرتسر جیل میں قید پاکستانی لڑکے کی شناخت 15 سالہ حسنین کے نام سے ہو گئی جو لاہور کا رہائشی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق بولنے اور سننے کی صلاحیت سے محروم حسنین کو 17 مئی کو بھارت میں گرفتار کیا گیا۔ لاہور کے نواحی علاقے بھمبے جھگیاں کا 15 سالہ نوجوان حسنین علی رواں برس 2 مئی کو گھر سے ایسا نکلا کہ واپس نہ آیا، والد ین صبح شام بیٹے کی راہ تکتے رہے، حسنین کا غریب باپ محنت مزدوری کر کے بمشکل دو وقت کی روٹی کماتا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ حسنین بھارت کیسے پہنچا انہیں کچھ معلوم نہیں۔ حکومت ان کے بیٹے کو واپس لانے کا فوری انتظام کرے۔حسنین کے والد جاوید اقبال نے بتایا کہ اس کے 7 بچے ہیں اور گھر میں سب لوگ بے صبری سے حسنین کا انتظار کر رہے ہیں جبکہ والدہ عشرت بی بی کہتی ہیں کہ بیٹا نہ بول سکتا ہے نہ سن سکتا ہے اور انہیں اس کی فکر کھائی جا رہی ہے۔ حسنین کی خالہ نے بھی حکومت سے اپیل کی ہے کہ وہ ان کے پیارے کو واپس لانے کا فوری انتظام کرے۔ حسنین علی کے اہل خانہ کہتے ہیں کہ وہ جیو نیوز اور انصار برنی ٹرسٹ کے شکر گزار ہیں جنہوں نے ان کے بیٹے کی نشاندہی کر کے امیدوں کے چراغ دوبارہ روشن کر دیے ہیں۔ خیال رہے کہ چند روز قبل یہ خبریں منظر عام پر آئی تھیں کہ بھارت کے شہر امرتسر کی جیل میں ایک نو عمر پاکستانی بچہ قید ہے۔ بھارتی حکام کی جانب سے نئی دلی میں پاکستانی ہائی کمیشن کو آگاہ کیا گیا تھا کہ 17 مئی کو ایک بچے کو گرفتار کیا گیا جو امرتسر کی جیل میں قید ہے، یہ لڑکا بولنے اور سننے کی صلاحیتوں سے محروم ہے۔ پاکستانی ہائی کمیشن کو بتایا گیا تھا کہ بچہ قائد اعظم محمد علی جناح کی تصویر اور پاکستانی کرنسی کو پہچانتا ہے۔

loading...