اشاعت کے باوقار 30 سال

مفتی قوی ایک بار پھرجسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

مفتی قوی ایک بار پھرجسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

لاہور: عدالت نے قندیل بلوچ قتل کیس کے نامزد ملزم مفتی عبد القوی کو ایک بار پھر جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا۔ پولیس نے مفتی عبد القوی کو گزشتہ سماعت پر جوڈیشل مجسٹریٹ پرویز خان کی عدالت میں پیش کیا تھا جس پر عدالت نے انہیں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا تھا۔ پولیس نے پیر کو مفتی عبد القوی کا 12 روزہ جوڈیشل ریمانڈ ختم ہونے پر انہیں جوڈیشل مجسٹریٹ کے رو برو پیش کیا۔ پولیس نے عدالت کو بتایا کہ تفتیشی افسر نے پراسیکیوٹر کو مکمل چالان جمع کرا دیا ہے۔ پولیس کی جانب سے مفتی عبدالقوی کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا پر عدالت نے ملزم کا مزید 7 روزہ ریمانڈ منظور کرتے ہوئے پولیس کے حوالے کر دیا جب کہ مفتی عبد القوی کو 20 نومبر کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ برس جولائی میں قندیل بلوچ کو مبینہ طور پر ان کے بھائی وسیم نے غیرت کے نام پر قتل کیا تھا جب کہ مقدمے میں مقتولہ کا کزن حق نواز بھی شامل تھا اور یہ دونوں ملزمان اس وقت ملتان جیل میں ہیں۔ مفتی عبد القوی، قندیل بلوچ کے ہمراہ اس وقت منظرعام پر آئے جب گزشتہ سال رمضان المبارک کے دوران ماڈل نے چند سیلفیز اور ویڈیو سوشل میڈیا پر شیئر کی جس پر مختلف حلقوں کی جانب سے انہیں شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔

loading...