اشاعت کے باوقار 30 سال

تین ریفرنسز کو یکجا کرنے کی درخواست مسترد

تین ریفرنسز کو یکجا کرنے کی درخواست مسترد

اسلام آباد: احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی نیب کے تین ریفرنسز کو یکجا کرنے کی درخواست مسترد کر دی، تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں نواز شریف کی نیب کے تین ریفرنسز کو یکجا کرنے سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی، احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیر اعظم کی نیب ریفرنسز کو یکجا کرنے سے متعلق درخواست مسترد کر دی۔ دوران سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نوازشریف کو روسٹرم پر بلا لیا اور ان کو فرد جرم پڑھ کر سنائی، سابق وزیر اعظم نے صحت جرم سے انکار کر دیا، ان کا کہنا تھا کہ کیسز میں بنیادی حقوق سلب کئے جا رہے ہیں، ٹرائل کورٹ میں اپنا دفاع کروں گا، نواز شریف کا کہنا تھا کہ کارروائی سیاسی بنیادوں پر کی گئی۔ اس دوران نواز شریف کا احتساب عدالت کے جج سے مکالمہ بھی ہوا، سابق وزیر اعظم نے جج سے سوال کیا کہ 6 ماہ میں ٹرائل کیسے مکمل ہو سکتا ہے؟ اس پر نیب کورٹ کے جج محمد بشیر نے کہا کہ چاروں ریفرنسز کی سماعت ایک ساتھ شروع کریں تو مکمل کر لیں گے۔ سابق وزیر اعظم نے نمائندہ مقرر کرنے کے لئے عدالت سے استدعا کر دی جس پر عدالت نے نواز شریف سے باقاعدہ درخواست مانگ لی اور مقدمے کی سماعت 15 نومبر تک ملتوی کر دی اور گواہوں کو طلب کر لیا، دوران سماعت سابق وزیر اعظم نواز شریف 20 منٹ تک روسٹرم پر کھڑے رہے۔

loading...