اشاعت کے باوقار 30 سال

فخر زمان کو بطور ٹیسٹ اوپنر تیار کرنے کی تجویز

فخر زمان کو بطور ٹیسٹ اوپنر تیار کرنے کی تجویز

لاہور: رمیز راجہ نے فخر زمان کو بطور ٹیسٹ اوپنر تیار کرنے کی تجویز پیش کر دی۔ ایک انٹرویو میں رمیز راجہ نے کہا کہ فخر زمان کو بطور ٹیسٹ اوپنر تیار کیا جا سکتا ہے، آسٹریلوی ڈیوڈ وارنر اور بھارتی شیکھر دھون جارحانہ بیٹنگ کرتے ہوئے حریف کو ابتدا میں ہی دباؤ کا شکار کر دیتے ہیں، فخر زمان ردھم میں ہوں تو بہترین کارکردگی پیش کرتے ہیں، ان کی تکنیک پر تھوڑا کام کر لیا جائے تو پاکستان کا یہ تجربہ کامیاب اور ٹیسٹ اوپننگ کا مسئلہ حل ہو سکتا ہے۔ رمیز راجہ نے کہا کہ ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی میں قومی ٹیم کی کارکردگی میں وہی جارحانہ پن نظر آنے لگا جو جدید کرکٹ کی ضرورت سمجھا جاتا ہے، البتہ ٹیسٹ کرکٹ میں درست کمبی نیشن کے لیے مزید کام کرنے کی ضرورت ہو گی، انہوں نے کہا کہ یونس خان اور مصباح الحق اپنے ٹمپرامنٹ کی وجہ سے کریز پر زیادہ قیام کرتے ہوئے حریف کو اپنی حکمت عملی تبدیل کرنے پر مجبور کر دیتے تھے لیکن نوجوان بیٹسمین مسائل کا شکار نظر آتے ہیں، اظہر علی اور اسد شفیق کا بیٹنگ آرڈر تبدیل کرنے سے بھی ٹیم تھوڑا اپ سیٹ ہوئی،بابر اعظم کی ٹیسٹ کرکٹ میں فارم کا مسئلہ حل اور بہتری کے لیے تھوڑا کام کرنے کی ضرورت ہے، اس حوالے سے اہم فیصلے کرتے ہوئے مستقبل کی پلاننگ کرنا ہو گی۔ سابق کپتان نے کہا کہ تمام تر خامیوں کے باوجود ڈومیسٹک کرکٹ سے نیا ٹیلنٹ سامنے آ ہی جاتا ہے، اسے نکھارنے اور سنوارنے کے لیے مناسب رہنمائی اور محنت کی ضرورت ہے، قدرتی صلاحیتوں سے مالا مال چند کرکٹرز کو ڈومیسٹک کرکٹ کی بھٹی سے گزارنے کی بھی ضرورت نہیں ہوتی، شاداب خان اس کی مثال ہیں، پوری امید ہے کہ پاکستان کو ایسے نوجوان کرکٹرز ضرور مل جائیں گے جو سینئرز کا خلا پْر کر سکیں۔

loading...