اشاعت کے باوقار 30 سال

شہباز شریف کا عام انتخابات 2018ء میں وزیر اعظم بننے کا مطالبہ

شہباز شریف کا عام انتخابات 2018ء میں وزیر اعظم بننے کا مطالبہ

اسلام آباد: وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف نے عام انتخابات 2018ء میں میاں نوازشریف سے وزیر اعظم بنانے کا مطالبہ کر دیا ، وزیر اعظم کی لندن روانگی اور شہباز شریف سے اہم ملاقات سے مسلم لیگ (ن) کے اندر تشویش کی لہر دوڑ گئی ۔پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف نے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو ٹاسک دیا ہے کہ شہباز شریف کو راضی کر کے نہ صرف واپس لے آئیں بلکہ ان کی ہدایت پر حکومت کے اندر ممکنہ اکھاڑ پچھاڑ بھی کر دی جائے تاکہ پارٹی معاملات مزید خراب نہ ہوں۔ دوسری جانب سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کی روش سے بھی پارٹی میں شدید اضطراب کی صورت حال پائی جاتی ہے اور یقین کیا جا رہا ہے کہ شہباز شریف ہی چوہدری نثار علی خان کو پارٹی قیادت کے فیصلوں کے خلاف نہ بولنے پر راضی کر سکتے ہیں کیونکہ پارٹی رہنما سمجھتے ہیں کہ چوہدری نثار علی خان کا موقف سو فیصد درست ہے جس کے باعث پارٹی کے اندر علیحدہ سوچ بڑی تیزی سے سرایت کر رہی ہے ۔ ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ شہباز شریف وزیر اعظم کی تبدیلی کے فی الفور حامی ہیں اور انہوں نے میاں نواز شریف سے آئندہ عام انتخابات 2018ء میں خود کو وزیر اعظم بنانے کا بھی مطالبہ کر رکھا ہے جس کے باعث نواز شریف نے پاکستان آ کر یہ اہم فیصلہ لینا تھا مگر انہوں نے چند رفقاء کے مشورے کے بعد یہ فیصلہ بدل لیا جس کے باعث شہباز شریف وطن واپس نہ آئے اور لندن میں ہی بیٹھ گئے ہیں ۔

loading...