اشاعت کے باوقار 30 سال

کچھ منصف بھی تو قیدی ہیں، ہمیں انصاف کیا دیں گے

کچھ منصف بھی تو قیدی ہیں، ہمیں انصاف کیا دیں گے

اسلام آباد: مسلم لیگ (ن) کے رہنما مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ سزاؤں سے نہیں ڈرتے اور پہلے بھی ناکردہ گناہوں کی سزائیں بھگتی ہیں نواز شریف کی پیشی کے موقع پر اسلام آباد میں احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے رہنما مشاہد اللہ خان نے کہا کہ نواز شریف سے اس بات کا انتقام لیا جا رہا ہے کہ انہوں نے ملک اور عوام کی خدمت کی۔ جس طریقے سے ہمیں انصاف دیا جا رہا ہے اس کی ماضی میں کوئی مثال نہیں ملتی، کچھ جج بہت ہی شاندار اور بہادری کے ساتھ تاریخی فیصلے کرتے ہیں جب کہ کچھ ججز کی پیشانیوں پر لکھا ہوتا ہے کہ ’’یہ منصف بھی تو قیدی ہیں ہمیں انصاف کیا دیں گے‘‘۔ واضح رہے کہ بلوچستان سازش کیس کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت میں پیشی کے موقع پر مشہور شاعر حبیب جالب نے یہ شعر پڑھا تھا یہ منصف بھی تو قیدی ہیں، ہمیں انصاف کیا دیں گے

loading...