اشاعت کے باوقار 30 سال

وزیر اعظم کی تبدیلی کا پلان بی مرتب

وزیر اعظم کی تبدیلی کا پلان بی مرتب

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ ن کو متحد رکھنے کے لیے وزیر اعظم کو تبدیل کرنے کا پلان بی ترتیب دے دیا گیا ہے۔ اگلا وزیر اعظم چوہدری نثار علی خان متوقع، چند روز میں پارٹی اجلاس میں حتمی فیصلہ کیے جانے کا امکان ہے۔ پاکستان مسلم لیگ ن کے ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کو لندن میں ہونے والی میٹنگ میں بتایا گیا کہ پارٹی کو متحد رکھنا موجودہ وقت میں بہت بڑا چیلنج ہے اور خدشہ ظاہر کیا گیا کہ آئندہ انتخابات سے قبل ہی اہم پارٹی رہنما چھوڑ کر چلے جائیں۔ وزیر اعلیٰ پنجاب سے نواز شریف کی علیحدہ ملاقات ہوئی ہے اور پارٹی کو متحد رکھنے کے لیے متعدد تجاویز پر غور کیا گیا تھا۔ ذرائع کا کہنا ہے پارٹی کے سینئر رہنماؤں نے نواز شریف کو پارٹی کی صدارت بھی چھوڑنے کا بھی مشورہ دیا مگر اس پر حتمی فیصلہ تاحال نہ ہو سکا ہے۔ دوسری جانب دونوں بھائیوں کے درمیان یہ بھی بات ہوئی کہ اگر چوہدری نثار علی خان کو وزیر اعظم بنا دیا جائے تو پارٹی ٹوٹ پھوٹ سے بچ جائے گی، ذرائع کے مطابق یہ بات بھی برملا کی گئی کہ چوہدری نثار علی خان بے باک نڈر اور اسٹیٹ فارورڈ ہیں اور موجودہ دور میں حکمت عملی سے کام زیادہ لیا جائے تو بہتر ہے۔ شہباز شریف نے کہا کہ اگر اداروں کے خلاف بات نہ کی جائے تو پارٹی میں تناؤ کی بات ختم ہو سکتی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں بھائیوں نے ایک اور ملاقات میں پارٹی کو بچانے کے ایجنڈے پر حتمی فیصلے کرنے کی حامی بھری ہے اور جو کہ آئندہ پارٹی اجلاس سے قبل ہو گی اور پارٹی اجلاس میں ممکنہ فیصلے کیے جانے کا امکان ہے، اس حوالے سے وزیر اعلی پنجاب چوہدری نثار علی خان سے بھی مشاورت کریں گے انہیں اعتماد میں لے کر اعلان کیا جائے گا۔

loading...