اشاعت کے باوقار 30 سال

نواز شریف لندن سے واپس وطن پہنچ گئے

نواز شریف لندن سے واپس وطن پہنچ گئے

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ (ن)کے صدر میاں نواز شریف لندن سے واپس اسلام آباد پہنچ گئے ، جمعہ کو احتساب عدالت میں پیش ہوں گے ،نواز شریف بے نظیر ایئر پورٹ پر پہنچنے کے بعد قافلے کی صورت میں وفاقی دارالحکومت میں اپنی رہائش گاہ پنجاب ہاؤس پہنچ گئے۔ تفصیلات کے مطابق قومی ایئر لائن کی فلائٹ نمبر پی کے 786 نواز شریف کو لے کر اسلام آباد کے بینظیر انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر پہنچی جہاں ان کے استقبال کے لیے لیگی رہنماؤں سمیت پارٹی کارکنان کی بڑی تعداد موجود تھی۔ لیگی قیادت نے نواز شریف کا ایئرپورٹ پر استقبال کیا جب کہ سابق وزیر اعظم نے ان کے استقبال کے لیے آنے والے رہنماؤں سے مصافحہ بھی کیا۔ نواز شریف کو پہلے راول لانج لایا گیا، جہاں پہلے سے موجود تفتیشی آفیسر محبوب عالم کی سربراہی میں نیب کی ٹیم نے سابق وزیر اعظم سے احتساب عدالت کے سمن کی تعمیل کروائی۔ ذرائع کے مطابق تعمیلی سمن پر دستخط کے بعد نواز شریف نے ان کے استقبال کے لیے موجود مسلم لیگ (ن)کے رہنماؤں سے مختصر مشاورت کی اور پھر پنجاب ہاؤس پہنچ گئے۔ اس موقع پر سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ ذرائع کے مطابق نواز شریف قافلے کی صورت میں پنجاب ہاؤس روانہ ہوئے جب کہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق، پارٹی رہنما آصف کرمانی اور پارٹی کے سیکریٹری اطلاعات پرویز رشید سمیت دیگر رہنما بھی ان کے ہمراہ
تھے۔ سابق وزیر اعظم نواز شریف کے زیرصدارت پنجاب ہاؤس مسلم لیگ کا مشاورتی اجلاس ختم ہو گیا جس میں راجہ ظفرالحق، مشاہد اللہ، چودھری تنویر، پرویز رشید، سعد رفیق، زاہد حامد، انوشہ رحمان ، طارق فضل چودھری، طلال چودھری، امیرمقام شریک ہوئے، اجلاس میں ملکی سیاسی صورت حال اور آئندہ کی حکمت عملی پر مشاورت کی گئی اس کے علاوہ نواز شریف کے خلاف نیب ریفرنسز اور احتساب عدالت میں پیشی پر بات چیت ہوئی، پارٹی رہنماؤں نے بیگم کلثوم نواز کی صحت سے متعلق دریافت کیا، اس موقع پر نوازشریف کا پارٹی رہنماؤں سے کہنا تھا کہ بیگم کلثوم نواز کو آپ کی دعاؤں کی ضرورت ہے، انہوں نے کہا کہ ہم نے کوئی تصادم کی راہ اختیار نہیں کی ،ہمارے ساتھ تصادم کیا گیا، سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ کوئی بے اصولی کی نہ آئندہ ایسا کچھ کریں گے ،ہم اقتدار نہیں اقدار کی سیاست پر یقین رکھتے ہیں، نوازشریف کا کہناتھا کہ میں مقدمات کا سامنے کرنے کے لئے ہی آیا ہوں، مقدمات سے گھبرانے والا نہیں۔ خیال رہے کہ پاناما پیپرز کیس میں سپریم کورٹ کے حتمی فیصلے کی روشنی میں نیب کی جانب سے دائر ریفرنسز کے سلسلے میں اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیش ہونے کے لیے نواز شریف لندن سے اسلام آباد پہنچے۔ یاد رہے کہ نواز شریف گزشتہ ماہ 5 اکتوبر کو لندن روانہ ہو گئے تھے جہاں انہوں نے اپنی اہلیہ کلثوم نواز کی تیمار داری کی جو کہ کینسر کے عارضے میں مبتلا ہیں اور لندن کے ایک ہسپتال میں زیرِ علاج ہیں۔ جمعے کو اسلام آباد کی احتساب عدالت میں نواز شریف کے ساتھ ساتھ مریم نواز اور کیپٹن(ر) صفدر کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت ہو گی، عدالت نے گزشتہ دو سماعتوں میں عدم پیشی پر نواز شریف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کئے تھے۔

loading...