اشاعت کے باوقار 30 سال

اسحاق ڈار کا پاکستان واپس آنے سے انکار

اسحاق ڈار کا پاکستان واپس آنے سے انکار

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے لندن سے واپس پاکستان آنے سے انکار کر دیا ہے۔ جس کے بعد وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے وزارت خزانہ کا انچارج مفتاح اسماعیل کے حوالے کر دیا ہے گزشتہ رات پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کا فیصلہ بھی مفتاح اسماعیل کے حکم پر کیا گیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ اسحاق ڈار نے لندن جا کر واپس پاکستان آنے سے انکار کر دیا ہے اور واپس نہ آنے کا بہانہ اپنی بیماری کا بنایا ہے۔ حقیقت میں اسحاق ڈار نے پاکستان واپس آکر احتساب عدالت میں مقدمات کا سامنا کرنے سے انکار کر دیا ہے جس کے نتیجہ میں اب وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی گومگو کی صورتحال سے دوچار ہیں۔ ابتداء میں اسحاق ڈار نے 8 ہفتوں کی چھٹی کی درخواست وزیر اعظم کو دی تھی جو انہوں نے لندن میں ہی رد کر دی تھی۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ وزیر اعظم نے مفتاح اسماعیل کو وزارت خزانہ کا مکمل چارج دے دیا ہے اور گزشتہ رات پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کا فیصلہ مفتاح اسماعیل نے کیا تھا کیونکہ وزارت خزانہ نے اسحاق ڈار سے اس حوالے سے مشورہ بھی نہیں کیا ہے اسحاق ڈار پاکستان سے کمانڈو ایکشن کر کے بھاگے ہیں پہلے مصنوعی طیارے سے تاجکستان گئے تھے وہاں سے خالی طیارہ واپس بھجوایا پھر خود دبئی پہنچے اور دبئی سے لندن پہنچ کر بیمار ہو گئے ہیں جبکہ پاکستان میں احتساب عدالت نے انہیں 1 ارب کے ناجائز اثاثے بنانے کے مقدمہ میں طلب کر رکھا ہے جبکہ ان کے دونوں بیٹوں کو بھی احتساب عدالت نے طلب کیا ہوا ہے۔

loading...