اشاعت کے باوقار 30 سال

مردم شماری کے خلاف مظاہرہ ہر صورت میں کریں گے

مردم شماری کے خلاف مظاہرہ ہر صورت میں کریں گے

کراچی: میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ کراچی میں ہونے والی مردم شماری کے خلاف مظاہرہ ہر صورت میں کریں گے پرامن احتجاج ہمارا حق ہے، سندھ اور کراچی کی آبادی کو کم کر کے دکھانا نا انصافی ہے اور اس ناانصافی کے خلاف 5 نومبر کو کراچی کی عوام بھرپور احتجاج کریں گے، یہ بات انہوں نے راجہ غضنفر علی خان روڈ صدر میں دکانداروں اور عام شہریوں میں مردم شماری کے حوالے سے پمفلٹ کی تقسیم اور اس حوالے سے شہریوں کو آگاہی دینے کے دوران میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہی، اس موقع پر ایم پی اے ہیر سوہو باجی، فرح باجی، چیئرمین ای اینڈ آئی پی قیصر امتیاز، یو سی چیئرمین ناصر تیموری، وائس چیئرمین مقیم عالم اور دیگر منتخب بلدیاتی نمائندے بھی موجود تھے، میئر کراچی نے کہا کہ ہمیں ابھی تک حکومت کی طرف سے اس سلسلے میں این او سی نہیں ملی ہم نے لیاقت آباد اور باغ جناح کا آپشن دیا تھا، مردم شماری کے نتائج ہمیں قبول نہیں اور ہم احتجاج سے پیچھے نہیں ہٹیں گے، مجھے امید ہے کہ وزیر اعلیٰ سندھ اس کا نوٹس لیں گے اور آج رات تک کوئی فیصلہ کریں گے انہوں نے کہا کہ کراچی کی آبادی کم دکھانے سے سی پیک کا معاہدہ متاثر ہو گا اور پروجیکٹ کی جو منصوبہ بندی کی جا رہی ہے وہ غلط ہو جائے گی، میئر کراچی نے کہا کہ مردم شماری کے غلط نتائج کے اثرات پورے ملک پر پڑیں گے اور پالیسی ساز ادارے اس سے متاثر ہوں گے، انہوں نے کہا کہ Census کمیشن حکومت کی رہنمائی کرے اور کراچی کی صحیح آبادی جو تین کروڑ کے لگ بھگ ہے اسے تسلیم کیا جائے کیونکہ ایسا نہ کرکے ہم اپنے ملک کی ترقی میں خود ہی رکاوٹ بنتے جا رہے ہیں، اگر 70 سال بعد بھی اپنے اداروں کو غلط اعداد و شمار دیں گے تو ذرا سوچئے کہ ہم کیا کرنے جا رہے ہیں لہٰذا ہم چاہتے ہیں کہ حکومت حالیہ مردم شماری کے نتائج پر نظر ثانی کرے اور درست نتائج سامنے لائے، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ڈپٹی میئر کے لئے ابھی تک کوئی نام فائنل نہیں کیا گیا جو بھی اس صلاحیت کا حامل ہو گا ایک دو روز میں رابطہ کمیٹی حتمی فیصلہ کر کے آپ کے سامنے لائے گی، انہوں نے کہا کہ بعض ٹی وی چینلز اور اخبارات مجھ پر بے ہودہ اور من گھڑت الزامات لگا رہے ہیں آئندہ جو بھی ایسا کرے گا اس کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی جو ہمارا حق ہے، آج بول ٹی وی کو ہتک عزت کا نوٹس دے دیا ہے، انہوں نے کہا کہ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی چوتھی اور سندھ کی دوسری بڑی جماعت ہے، کراچی کی عوام نے ہمیں مینڈیٹ دیا ہے انشاء اللہ ہم اس مینڈیٹ پر پورا اتریں گے اور آپ جلد دیکھیں گے کہ شہر میں زیر التواء کام تیزی سے مکمل ہونا شروع ہو جائیں گے انہوں نے کہا کہ مردم شماری کے خلاف احتجاج کرنے میں سندھ گورنمنٹ کو ہمارا ساتھ دینا چاہئے کیونکہ یہ پورے سندھ کا مسئلہ ہے، بعد ازاں انہوں نے آل پاکستان جیم مرچنٹس اینڈ جیولرز ایسوسی ایشن کے عہدیداران اور ممبران سے ملاقات کی انہیں مردم شماری کے حوالے سے اس مہم میں شرکت کی دعوت دی اور کہا کہ ہم نیک نیتی سے کام کر رہے ہیں اور مردم شماری میں ناانصافی کے خلاف یہ مہم کراچی شہر کی بہتری کے لئے چلائی جا رہی ہے کیونکہ صحیح مردم شماری میں ہی ترقی و خوشحالی کا راز پنہاں ہے۔

loading...