اشاعت کے باوقار 30 سال

ٹرمپ اپنا وعدہ پورا کرنے کے لئے بے تاب

ٹرمپ اپنا وعدہ پورا کرنے کے لئے بے تاب

واشنگٹن: امریکی صدارتی انتخابات کے دوران کئے گئے وعدوں میں سے صدر ڈونلڈ ٹرمپ میکسیکو کی سرحد پر دیوار کی تعمیر کا وعدہ بھی بہت جلد پورا کرنے جا رہے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ جہاں سفری پابندیوں، اسلامی شدت پسندی کا خاتمہ، ایران معاہدہ اور سب سے پہلے امریکہ جیسے وعدے پورے کر ہے ہیں وہیں میکسیکو کی سرحد پر دیوار تعمیر کرنے کا وعدہ بھی بہت جلد پورا کرنے جا رہے ہیں۔ مختلف حلقوں کی جانب سے شدید مخالفت کے باوجود تعمیراتی کمپنیوں نے دیوار کے آٹھ مختلف ڈیزائن تیار کر کے صدر ٹرمپ کو پیش کر دیئے ہیں، جن میں سب سے چھوٹی دیوار اٹھارہ فٹ جبکہ سب سے اونچی دیوار کا ڈیزائن تیس فٹ رکھا گیا ہے، ڈیزائنز میں آدھی دیوار کونکریٹ جبکہ بقیہ پر دیگر مواد استعمال ہو گا۔ صدر ٹرمپ کے تجویز کردہ منصوبے میں میکسیکو سرحد پر بیس ارب ڈالرز کی لاگت سے دو ہزار میل لمبی دیوار تعمیر کی جائے گی، کانگریس سے ایک اعشاریہ چھ ارب ڈالرز منظور کرنے کی درخواست کی گئی ہے جبکہ صدر ٹرمپ باقی پیسے میکسیکو کی حکومت سے وصول کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ اعداد و شمار کے مطابق ہر سال میکسیکو سے سات لاکھ سے زائد افراد غیر قانونی طور پر سرحد پار کر کے امریکہ آتے ہیں جبکہ منشیات کی اسمگلنگ بھی اس سرحد پر عروج پر ہے، اس وقت امریکہ میں قانونی اور غیر قانونی طور پر 36 کروڑ سے زائد میکسیکو کے شہری آباد ہیں، جن کی رجسٹریشن پر بھی ٹرمپ انتظامیہ سختی کرتی نظر آ رہی ہے۔ ایک سروے کے مطابق ساٹھ فی صد امریکی میکسیکو کی سرحد پر دیوار تعمیر ہوتے دیکھنا نہیں چاہتے جبکہ انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی تنظیمیں اس دیوار کی تعمیر کو روکنے کے لئے مسلسل مظاہرے بھی کر رہی ہیں۔یاد رہے کہ ٹرمپ نے صدر منتخب ہونے کے بعد امریکا کے جنوب میں میکسیکو کے ساتھ سرحد پر دیوار تعمیر کرانے کا عہد کیا تھا۔

loading...