اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

پہلے ہوائی جہاز کی پرواز

امریکی ریاست فلوریڈا میں ایمرجنسی کا اعلان

امریکی ریاست فلوریڈا میں ایمرجنسی کا اعلان

فلوریڈا: امریکی ریاست فلوریڈا کے گورنر رک اسکاٹ نے رواں سال اگست میں ہونے والے جھڑپوں میں ملوث سفید فارم رہنما رچرڈ اسپنسر کی تقریر کے پیش نظر ریاست میں ایمرجنسی لگا دی۔ رچرڈ اسپنسر دوروز بعد گینزویل میں یونیورسٹی آف فلوریڈا میں تقریر کریں گے، فلوریڈا کے اس قصبے میں ایک لاکھ 30 ہزار کے قریب افراد رہتے ہیں۔ رک اسکاٹ نے ایمرجنسی کے حوالے سے کہا کہ اس کا مقصد یہ ہے کہ سیکیورٹی فورسز کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لیے بھرپور تیاری کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ 'ہم ایک ایسے ملک میں رہتے ہیں جہاں پر ہر کسی کو تقریر کی آزادی ہے تاہم فساد پھیلانے کو برداشت نہیں کیا جائے گا اور عوام کی حفاظت پہلی ترجیح ہے'۔ گورنر نے کہا کہ 'یہ انتظامی آرڈر ایک اضافی قدم ہے تاکہ یونیورسٹی آف فلوریڈا اور پوری برادری کی سلامتی کو یقینی بنایا جا سکے تاکہ وہ محفوظ رہیں'۔ خیال رہے کہ اسپنسر نے رواں سال اگست میں ہونے والے فرقہ وارانہ فسادات کے دوران بھی تقریریں کی تھیں جس کے بعد حالات کشیدہ ہوگئے تھے۔ان جھڑپوں کے نتیجے میں ایک 32 سالہ خاتون اس وقت ماری گئی تھیں جب ایک کار مظاہرین میں پھنس گئی تھیں جبکہ فسادات کو روکنے میں مصروف دو پولیس اہلکار بھی ہلاک ہو گئے تھے جب ان کا ہیلی کاپٹر فرائض کے انجام دہی کے دوران گر کر تباہ ہو گیا تھا۔ یونیورسٹی آف فلوریڈا نے اسپنسر کو تقریر کی آزادی کے نام پر خطاب کی اجازت دی ہے لیکن انھیں تقریر کے لیے باقاعدہ دعوت نہیں دی۔

loading...