اشاعت کے باوقار 30 سال

راجناتھ سنگھ نے کشمیر کے بھارت کا حصہ نہ ہونے کا اعتراف کر لیا

راجناتھ سنگھ نے کشمیر کے بھارت کا حصہ نہ ہونے کا اعتراف کر لیا

سرینگر : کل جماعتی حریت کانفرنس گروپ نے کہا ہے کہ بھارتی وزیر داخلہ کے یہ ریمارکس کہ سردار پاٹیل کشمیر کو بھارت میں ضم کر چکے ہوتے اگر نہرو نے نہ روکا ہوتا وادی کے بھارت کا حصہ نہ ہونے کا اعتراف ہے حریت کانفرنس کے ترجمان نے اپنے بیان میں کہا کہ راجناتھ سنگھ کے الفاظ سے بالکل واضح ہو گیا ہے کہ کشمیر بھارت کا حصہ نہیں بلکہ بھارت نے ایک تنازعہ کی صورت میں اقوام متحدہ تک پہنچایا جہاں متعدد قراردادوں کے ذریعے کشمیری عوام کے حق خود ارادیت کے حق کو تسلیم کر کے یہ واضح کیا گیا کہ کشمیری عوام اپنے مستقبل کا آزادنہ تعین استصواب رائے عامہ سے کریں گے لیکن ابھی تک بھارت اپنے وعددوں اور عالمی سطح پر تسلیم شدہ قراردادوں سے متحرف ہو کر یہ دعویٰ کرتا رہا کہ کمشیر بھارت کا اٹوٹ انگ ہے انہوں نے کہا کہ اب جب کہ بھارتی وزیر داخلہ یہ تسلیم کر ہی چکے ہیں کہ کشمیر بھارت میں ضم نہیں ہوا تو انہیں اس حقیقت کا بھی اعتراف کر ہی لینا چاہیے کہ بھارت طاقت کے بل بوتے پر ہی جموں و کشمیر پر قابض ہے ترجمان نے کہا کہ اب بھارتی وزیر داخلہ کو یہ بھی چاہیے کہ وہ ملک کو یہ بتائیں کہ ہمیں کشمیر کے بھارت کا اٹوٹ انگ ہونے کی رٹ ترک کر لینی چاہیے اور کمشیری عوام کو ان کا پیدائشی اور عالمی سطح پر تسلیم شدہ خود ارادیت کا حق دے کر جنوبی ایشیا میں تنازعہ کشمیر کی وجہ سے پائی جانے والی کشیدگی اور بے چینی کو ختم کیا جانا چاہیے ۔

loading...