اشاعت کے باوقار 30 سال

ڈونلڈ ٹرمپ نے نئی ایران پالیسی کا اعلان کر دیا

ڈونلڈ ٹرمپ نے نئی ایران پالیسی کا اعلان کر دیا

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نئی ایران پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی پاسداران انقلاب دہشتگردوں کی معاونت کر رہا ہے، ایران جوہری معاہدے کی روح کے مطابق عمل نہیں کر رہا، ایران کا جوہری ہتھیاروں تک رسائی کا راستہ روکیں گے، ایرانی پاسداران انقلاب پر پابندی عائد ہو گی، ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ تاریخ کا بد ترین فیصلہ تھا، ہم اس معاہدے سے ابھی دستبردار نہیں ہو رہے۔ جمعہ کے روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران کے لیے نئی امریکی پالیسی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ایران کے متعلق پالیسی پر نظر ثانی کی ہے، دوسرے ممالک کہہ رہے کہ ایران جوہری ڈیل کی پاسداری کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایران جوہری ڈیل کی روح کے مطابق عمل نہیں کر رہا، ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ امریکا کا بدترین فیصلہ تھا، 1979 میں تہران میں امریکی سفارت خانہ کے واقعے کو بھلایا نہیں جا سکتا، ایران کی جانب سے بڑھتے ہوئے خطرات کے باعث پابندیاں عائد کی گئی تھیں، سابقہ امریکی انتظامیہ نے ایران پر پابندیاں ختم کیں، اب ایرانی پاسداران انقلاب پر پابندی عائد ہو گی۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ ایران کے اقدامات کے مخالف ہیں، ایران مشرق وسطیٰ میں دہشتگرد نیٹ ورکس کو سپورٹ کر رہا ہے، ایرانی پاسداران انقلاب دہشتگردوں کی معاونت کر رہا ہے، ایران جوہری ڈیل کی روح کے مطابق عمل نہیں کر رہا، ایران کا جوہری ہتھیاروں تک رسائی کا راستہ روکیں گے، ایرانی پاسداران انقلاب پر سخت پابندیاں عائد کی جائیں، ظلم کے شکار ایرانی عوام سے اظہار یکجہتی کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ امریکا، ایران جوہری معاہدہ کو کسی بھی وقت ختم کر سکتا ہے، کانگریس سے کہوں گا ایران ڈیل کی خامیوں کا جائرہ لے، ایران کی جوہری سرگرمیوں کو روکنا ضروری ہے۔

loading...