اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

بروٹس نے خود کشی کر لی

تصدق جیلانی کو عالمی عدالت انصاف میں ایڈہاک جج مقرر کرنے کا فیصلہ

تصدق جیلانی کو عالمی عدالت انصاف میں ایڈہاک جج مقرر کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: حکومت نے سابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ریٹائرڈ تصدق حسین جیلانی کو بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کیس میں ایڈہاک جج مقرر کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے سابق چیف جسٹس آف پاکستان تصدق حسین جیلانی کو بھارتی جاسوس کلبھوشن کے کیس میں عالمی عدالت انصاف میں بطور ایڈہاک جج مقرر کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ محکمہ قانون کی جانب سے ایڈہاک جج کے تقرر کے لیے جو سمری وزیر اعظم کو ارسال کی گئی اس میں دو نام تجویز کیے گئے جن میں جسٹس ریٹائرڈ تصدق حسین جیلانی اور سینئر وکیل مخدوم علی خان کا نام شامل تھا۔ حکومت نے فوج سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز سے مشورے کے بعد تصدق جیلانی کو مقرر کرنے کا فیصلہ کیا۔
ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت رواں ماہ ہی عالمی عدالت کو ایڈہاک جج مقرر کرنے کے اپنے اس فیصلے سے آگاہ کر دے گی۔ واضح رہے کہ فوجی عدالت نے کلبھوشن یادیو کو سزائے موت سنائی ہے جب کہ بھارت نے اس کیس کو عالمی عدالت انصاف میں اٹھایا ہے جہاں اس کی سماعت جاری ہے۔ جسٹس (ر) تصدق حسین جیلانی نے 12 دسمبر 2013 کو چیف جسٹس آف پاکستان کے عہدے کا حلف اٹھایا تھا اور 5 جولائی 2014 کو وہ ریٹائر ہوئے تھے۔