اشاعت کے باوقار 30 سال

ریلوے اسٹیشن میں چاقو کے وار سے دو خواتین ہلاک

ریلوے اسٹیشن میں چاقو کے وار سے دو خواتین ہلاک

مارسیلی : فرانس کے شہر مارسیلی کے ریلوے اسٹیشن میں چاقو کے حملے میں دو خواتین ہلاک ہو گئیں۔ مارسیلی کی مقامی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ فرانس کے دہشت گردی سے متاثرہ علاقوں میں فوجیوں کو تعینات کیا گیا تھا اور جو اہل کار اسٹیشن میں تعینات تھے انھوں نے فوری کارروائی کرتے ہوئے حملہ آور شخص کو گولی مار دی۔ریلوے اسٹیشن میں پیش آنے والے واقعے کے بعد مسلح پولیس کے دستوں کو بھی بھیج دیا گیا اور فرانس کے دوسرے بڑے شہر کے ریلوے اسٹیشن کو خالی کر کے ریلوے نظام کو بھی روک دیا گیا۔ فرا نسیسی خبر رسا ں ادارے سے بات کرتے ہوئے علاقائی پولیس افسر اولیور ڈی میزیئرز نے کہا کہ 'چاقو کے حملے کا شکار ہونے والی دونوں خواتین ہلاک ہو گئیں۔ انسداد دہشت گردی کے پراسیکیوٹر کا اس واقعے کے بعد کہنا تھا کہ انھوں نے تفتیش کا آغاز کر دیا ہے اور اس بات کا جائزہ لیا جا رہا ہے کہ حملہ آور کا تعلق کسی دہشت گرد تنظیم سے تھا یا کوئی اور وجہ اس حملے کے پیچھے کار فرما تھی۔ خیال رہے کہ فرانس میں دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ (داعش) یا القاعدہ سے منسلک انتہا پسندوں کے حملوں کے بعد ملک بھر میں ایمرجنسی نافذ کی گئی تھی اور تاحال حکام الرٹ ہیں۔ اعداد و شمار کے مطابق مذکورہ واقعے سے قبل فرانس میں 2015 سے اب تک دہشت گردی کے مختلف واقعات میں 239 افراد مارے گئے ہیں۔ یاد رہے کہ 2016 میں فرانس کے جنوبی شہر نیس میں ایک ٹرک ڈرائیور نے قومی دن کی تقریبات میں شریک افراد پر ٹرک چڑھا کر کچل دیا، جس کے نتیجے میں 84 افراد ہلاک اور متعدد شدید زخمی ہو گئے تھے۔

loading...