اشاعت کے باوقار 30 سال

بحر اوقیانوس پر پرواز کے دوران طیارے کا انجن فیل ہو گیا

بحر اوقیانوس پر پرواز کے دوران طیارے کا انجن فیل ہو گیا

اوٹاوا: بحر اوقیانوس پر سے گزرتے ہوئے ایئر فرانس کے طیارے کا انجن 37 ہزار فٹ کی بلندی پر فیل ہو گیا تاہم خوش قسمتی سے کوئی سانحہ رونما نہ ہوا۔ فرانس کے دارالحکومت پیرس سے امریکی شہر لاس اینجلس جانے والے طیارے ائر بس اے 380 کے چار میں سے ایک انجن میں دھماکا ہوا جس کے بعد اس نے کام کرنا بند کر دیا۔ طیارے کے پائلٹ نے پوری کوشش کر کے طیارے پر کنٹرول حاصل کیا اور اس کا رخ موڑ کر کینیڈا میں ہنگامی لینڈنگ کی۔ دو منزلہ طیارے میں 520 مسافر سوار تھے اور اس واقعے میں کوئی شخص زخمی نہیں ہوا۔ ایئر فرانس اور متعلقہ حکام نے انجن کی خرابی کی وجہ جاننے کے لیے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ جہاز کے مسافروں نے سوشل میڈیا پر طیارے کی تصاویر اور ویڈیوز پوسٹ کی ہیں جس میں انجن ٹوٹ پھوٹ کا شکار نظر آ رہا ہے۔
محفوظ لینڈنگ کے بعد مسافروں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ہمیں ایک زوردار آواز سنائی دی جس کے بعد طیارے نے فورا ہی غوطہ کھایا اور زور زور سے جھٹکے کھانے لگا، سب مسافروں میں خوف کی لہر دوڑ گئی کہ شاید ہمارا آخری وقت آ پہنچا ہے۔ تاہم کپتان نے کوشش کر کے بروقت جہاز پر قابو پا لیا، تاہم جہاز 8 منٹ تک جھٹکے کھاتا رہا جس کے بعد کپتان نے اعلان کیا کہ انجن میں معمولی دھماکا ہوا ہے۔ جہاز میں سوار طیاروں کی مرمت کرنے والے سابق مکینک ڈیوڈ رہمر نے بتایا کہ ممکنہ طور پر فرنٹ انجن میں موجود بیرونی پنکھے کے بلیڈز نے کام کرنا بند کر دیا تھا۔

loading...