اشاعت کے باوقار 30 سال

کشمیریوں کے حقوق کے لئے آئین میں ترمیم

کشمیریوں کے حقوق کے لئے آئین میں ترمیم

نئی دہلی/ناگپور۔ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کے سرسنگھ چالک موہن بھاگوت نے آج کہا کہ جموں و کشمیر کے سبھی شہریوں کو ان کے حقوق دینے کے لئے آئین میں ضروری ترمیم کر کے پرانی توضیعات کو بدلنا ہو گا۔ مسٹر بھاگوت نے آر ایس ایس کے صدر دفتر ناگپور میں دسہرہ کے موقع پر منعقد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر میں 1947 میں پاکستانی مقبوضہ کشمیر سے آئے لوگوں اور 1990 سے کشمیر وادی سے ہجرت کرنے والے کشمیریوں کے مسائل اب بھی جوں کہ توں برقرار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ایسا انتظام کرنا چاہئے کہ ہمارے یہ بھائی ملک کے دیگر شہریوں کی طرح جمہوری حقوق کا استعمال کر کے خوش حال رہیں اور باعزت اور محفوظ طریقے سے زندگی بسر کریں۔ سنگھ کے سربراہ نے کہا کہ جموں و کشمیر کے ان لوگوں کو ملک کے دیگر شہریوں کی طرح حقوق دستیاب کرانے کے لئے آئین میں ضروری ترمیم کر کے پرانی توضیعات کو بدلنا ہو گا۔ صرف اور صرف اسی طر یقے سے جموں و کشمیر کے لوگوں کو دیگر ہندوستانی شہریوں کے ساتھ جوڑا جا سکتا ہے اور ملک کی ترقی میں ان کی شراکت کو یقینی بنایا جا سکتا ہے۔ مسٹر بھاگوت کا اشارہ غالبا جموں و کشمیر کے خصوصی درجہ سے متعلق آرٹیکل 370 اور وہاں کے شہریوں کی تعریف طے کرنے والے آرٹیکل 35 اے کی طرف تھا۔

loading...