اشاعت کے باوقار 30 سال

امریکی بمبار طیاروں کی شمالی کوریا کے قریب سمندر پر پروازیں

امریکی بمبار طیاروں کی شمالی کوریا کے قریب سمندر پر پروازیں

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شمالی کوریا کے وزیر خارجہ کے بیان کے جواب میں کہا ہے کہ اگر وہ اپنی جذباتی بیان بازی یوں ہی جاری رکھتے ہیں تو پھر مسٹر ری اور کم بہت دیر تک نہیں رہیں گے۔ دوسری جانب امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون کا کہنا ہے کہ امریکی بمبار طیاروں نے کسی بھی خطرے سے نمٹنے کی صلاحیتوں کو جانچنے کے لیے شمالی کوریا کے قریب سمندر پر پروازیں کی ہیں۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے شمالی کورشا کے وزیر خارجہ کی نیویار ک میں تقریر سے متعلق اپنی ٹویٹ میں کہا: 'ابھی اقوام متحدہ میں شمالی کوریا کے وزیر خارجہ کے خطاب کو سنا۔ اگر وہ لٹل راکٹ مین کی ہی سوچ کی صدا بلند کرتے ہیں تو پھر وہ بہت دیر تک نہیں رہیں گے۔' شمالی کوریا کے وزیر خارجہ ری یونگ کے خطاب سے زرا پہلے پینٹاگون نے کہا تھا کہ اس کے جنگی جہازوں نے شمالی اور جنوبی کوریا کی سرحد سے کافی دور شمال میں پرازیں کی ہیں۔ پینٹاگون کی جانب سے جاری کیے جانے والے بیان میں کہا گیا کہ یہ مشن امریکی ارادے کا ثبوت ہے اور واضح پیغام ہے کہ صدر (ٹرمپ) کے پاس کسی بھی خطرے سے نمٹنے کے لیے متعدد فوجی راستے موجود ہیں۔ ہم امریکی سرزمین اور اپنے اتحادیوں کے دفاع کے لیے تمام فوجی صلاحیتوں کو استعمال کرنے کے لیے تیار ہیں۔‘ شمالی کوریا کے وزیرِ خارجہ ری یونگ ہو نے نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ 'خودکش مشن' پر ہیں۔ خیال رہے کہ صدر ٹرمپ نے جنرل اسمبلی میں کی گئی تقریر میں شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان کا مذاق اڑاتے ہوئے کہا تھا کہ 'راکٹ مین خود کش مشن پر ہے'۔

loading...