اشاعت کے باوقار 30 سال

جنرل اسمبلی کے اجلاس میں نیتن یاہو کا مطالبہ

جنرل اسمبلی کے اجلاس میں نیتن یاہو کا مطالبہ

نیویارک: اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاھو نے ایران کے جوہری پروگرام کے حوالے سے تہران اور چھ عالمی طاقتوں کے درمیان پائے معاہدے کو ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق نیویارک میں جنرل اسمبلی کے اجلاس سے خطاب میں نیتن یاھو نے کہا کہ ایران دنیا کے لئے دوسرا شمالی کوریا بنتا جا رہا ہے۔ عالمی برادری کو تہران کے ساتھ امن معاہدہ ختم کرنے کے لئے جرات کا مظاہرہ کرنا ہو گا۔ نیتن یاھو نے کہا کہ ایران نے شام، عراق اور لبنان میں اپنی مداخلت کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔ ایران نے عالمی طاقتوں کے ساتھ طے پائے معاہدے کی شرائط پر عملدرآمد نہیں کیا۔ اس لئے دنیا کو تہران کے ساتھ معاہدے کا از سرنو جائزہ لینا ہو گا۔ نیتن یاھو نے ایران پر دباو بڑھانے کے لئے مزید اقتصادی پابندیاں عائد کرنے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ ایران اپنے جوہری پروگرام کے حوالے سے دنیا کو دھوکہ دے رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی برادری یا تو ایران کے ساتھ طے پایا معاہدہ تبدیل کرے، یا اس میں ٹھوس اصلاحات لائے یا کالعدم قرار دے۔

loading...