اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

جارج واشنگٹن وفات پا گئے

انوشکا شرما نے ماضی کے کئی رازوں سے پردہ اٹھا دیا

انوشکا شرما نے ماضی کے کئی رازوں سے پردہ اٹھا دیا

ممبئی: نامور بالی ووڈ اداکارہ انوشکا شرما نے حال ہی میں ماضی میں اپنے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں کے بارے میں بات کرتے ہوئے کئی رازوں سے پردہ اٹھایا۔ اداکارہ انوشکا شرما کا شمار بالی ووڈ کی صف اول کی اداکاراؤں میں ہوتا ہے، بھارتی فلم انڈسٹری کے تقریباً تمام فلمسازوں کی اپنی فلم کے لیے پہلی پسند انوشکا شرما ہوتی ہیں، ان کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ قسمت نے انوشکا کا ساتھ کیرئیر کی ابتدا سے ہی دیا ہے کیونکہ انہیں بالی ووڈ میں پہلا بریک 2008 میں بالی ووڈ کنگ شاہ رخ خان کے ساتھ ملا تھا اور پہلی فلم کے بعد ہی ان کی کامیابیوں کا سفر شروع ہو گیا تاہم یہ سچ نہیں ہے، کامیابیوں کا مزہ چکھنے والی اداکارہ انوشکا شرما نے اپنے ساتھ ماضی میں ہونے والی ناانصافیوں سے پردہ اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں کئی فلمساز اور ہدایت کاروں نے رد کیا لیکن انہوں نے ہار نہیں مانی۔ بھارتی میڈیا کے مطابق انوشکا شرما نے حال ہی میں دئیے گئے انٹرویو میں اپنے ماضی کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے شوبز میں قدم جمانے کے لیے بہت چھوٹی عمر میں ہی کوششیں شروع کر دی تھیں، لیکن انہیں ابتدا میں کئی بار ناکامی کا سامنا کرنا پڑا، انوشکا نے بتایا کہ 15 سال کی عمر میں پہلی بار انہیں رد کیا گیا جس کی وجہ سے وہ پریشانی کا شکار ہو گئیں اور انہیں سخت صدمہ پہنچا اور پھر یہ سلسلہ چلتا رہا انہیں کئی شوز سے نکالا گیا جب کہ کئی اشتہاروں میں ان کی جگہ دوسری ماڈلز کو کاسٹ کیا گیا، وہ میری زندگی کا بہت مشکل دور تھا لہٰذا میں اس کے بارے میں کبھی بات نہیں کرتی۔ انہوں نے مزید کہا کہ 15 سال کی عمر میں انہوں نے ایک شو میں آڈیشن دیا تھا جس میں جج صرف ان لڑکیوں کو منتخب کر رہے تھے جو دیکھنے میں اچھی تھیں انہوں نے مجھے ریجیکٹ کر دیا اور اس بات سے مجھے اتنا دکھ پہنچا کہ میں یہ بات آج تک نہیں بھلا سکی، جسمانی خدوخال متناسب اور خوبصورت نہ ہونے کی وجہ سے رد کیے جانے پر نہ صرف میری عزت نفس مجروح ہوئی بلکہ میرا حوصلہ بھی ختم ہو گیا، شو کے پروڈیوسر کی جانب سے کہے جانے والے کمینٹس کہ آپ ظاہری طور پر اس شو کے لیے پرفیکٹ نہیں ہیں نے مجھے بہت صدمہ پہنچایا اور مجھے بہت زیادہ بے عزتی محسوس ہوئی، تاہم مشہور ہونے کے بعد میں ان باتوں کو سب کے سامنے بار بار دوہرانا ضروری نہیں سمجھتی کیونکہ اس کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔

loading...