اشاعت کے باوقار 30 سال

گردوارا میں عید کی نماز

گردوارا میں عید کی نماز

نئی دہلی: بھارت میں عیدالاضحی کے موقع پر مسلمانوں کی نماز کے لیے مختص گراﺅنڈ میں بارشوں کا پانی جمع ہو نے کی وجہ سے سکھوں نے اپنے گردوارا کے دروازے کھول دیے تاکہ مسلمان اپنی نماز پڑھ سکیں۔ بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست اترکھنڈ کے نواحی علاقے میں مسلمانوں کی ایک بڑی تعداد عیدالاضحی کی نماز ادا کرنے کے لیے اکٹھی ہوئی لیکن گزشتہ رات کی بارش کی وجہ سے گراﺅنڈ میں پانی جمع ہو گیا تھا۔یہ صورت حال دیکھ کر گردوارا کے سنگھ صبحا سامنے آئے اور گردوارا میں نماز ادا کرنے کی پیشکش کر دی۔ گردوارا کی انتظامیہ کا کہنا تھا کہ جوشی متھ میں ہندو، سکھ اور مسلمان ہم سب کا ایک مضبوط رشتہ ہے۔ شری ہمکند صاحب گردوارا کے منیجر کا کہنا تھا کہ گردوارا میں 500 سے زائد مسلمانوں نے عید الاضحی کی نماز ادا کی۔ یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ سکھوں نے مسلمانوں کو نما ز ادا کرنے کے لیے جگہ فراہم کی ہو۔ اس سے قبل 20 اگست 2012 میں بھی مسلمانوں کی ایک بڑی تعداد نے اسی گردوارا میں عید کی نماز ادا کی تھی۔ جوشی متھ کے رہائشی، 50 سالہ رئیس احمد کا کہنا ہے کہ اگرچہ ہم آئے روز معاشرے میں مسلمانوں اور دیگر مذاہب کے ماننے والوں میں اختلاف اور نفرت کی خبریں سنتے رہتے ہیں لیکن اللہ کی رحمت سے ہم نے اپنے علاقے میں کبھی ایسا واقع رونما ہوتے نہیں دیکھا ۔

loading...