اشاعت کے باوقار 30 سال

ٹرمپ کا قطر کے سلسلے میں سعودی عرب پر دباؤ

ٹرمپ کا قطر کے سلسلے میں سعودی عرب پر دباؤ

واشنگٹنَ: قطر اور دیگر عرب ممالک کے مابین جاری تنازعات اور مسلسل بگڑتے ہوئے تعلقات کے سنگین اثرات ساری دنیا پر مرتب ہورہے ہیں جب کہ اس حوالے سے سعودی عرب پر دباؤ بڑھانے کی غرض سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شاہ سلمان کو بھی فون کردیا ہے۔ ٹرمپ نے سعودی فرمانروا شاہ سلمان کو ٹیلی فون کر کے ان پر زور دیا کہ وہ قطر کے تنازع میں شامل دیگر تمام فریقین کے ساتھ مل کر اس مسئلے کا سفارتی حل ڈھونڈیں کیونکہ اس معاملے نے کئی خلیجی ملکوں کو خلجان میں مبتلا کر رکھا ہے۔ عالمی خبررساں ایجنسیوں کے مطابق وہائٹ ہاؤس سے جاری ہونے والے ایک بیان میں صدر ٹرمپ اور شاہ سلمان کے درمیان ٹیلی فونی رابطے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ امریکہ خطے میں امن کا خواہش مند ہے۔واضح رہے کہ اس سال جون سے شروع ہونے والے اس تنازعے میں سعودی عرب، بحرین، متحدہ عرب امارات اور مصر نے قطر پر یہ الزام عائد کیا تھا کہ وہ اسلامی عسکریت پسندوں اور ایران کی حمایت کرتا ہے؛ اور اس کے ساتھ اپنے سیاسی اور تجارتی تعلقات منقطع کر دئے تھے۔یہ تنازعہ بڑھنے کی صورت میں مذکورہ ممالک قطر کے ساتھ مکمل سفارتی قطع تعلق بھی کر سکتے ہیں اور ممکنہ طور پر ایک بڑی جنگ کا جنم بھی ہو سکتا ہے۔

loading...