اشاعت کے باوقار 30 سال

شیرنی کی بچپن میں جان بچانے کا صلہ

 شیرنی کی بچپن میں جان بچانے کا صلہ

کیپ ٹاﺅن: جانور بے شک ’جانور‘ ہوتے ہیں لیکن بسا اوقات وہ حسن سلوک کے نتیجے میں ایسے برتاﺅ کا مظاہرہ کر جاتے ہیں کہ عقل و خرد کے مالک حضرت انسان کی ساری کی ساری عقل دھری کی دھری رہ جاتی ہے۔ آج بھی ہم آپ کو ایک شیرنی کا ایسا ہی حیران کن واقعہ سنانے جا رہے ہیں جو ایک برطانوی اخبار نے اپنی ایک رپورٹ میں بیان کیا ہے۔ واقعہ کچھ یوں ہے کہ جنوبی افریقہ کا جنگلی حیات کا ماہر کیوین رچرڈ سن جنگل میں شیروں کی کچھار کے قریب جا کر آواز نکالتا ہے تاکہ وہ اس کی طرف متوجہ ہوں۔ وہ ایک ندی میں پانی کے اندر کھڑا ہوتا ہے تاکہ شیر کے متوقع حملے سے محفوظ رہ سکے۔ اس کے آواز نکالنے پر ایک شیرنی اس طرف آتی ہے اور خلاف توقع پانی میں چھلانگ لگا کر اس پر جھپٹ پڑتی ہے۔ مگر یہ کیا، شیرنی رچرڈسن کو نقصان پہنچانے کی بجائے اپنے اگلے دونوں پنجے اس کے کندھوں پر رکھ دیتی ہے اور اسے پیار سے چاٹنے لگتی ہے۔ آن لائن پوسٹ کی گئی ویڈیو میں رچرڈ سن شیرنی کے اس خلافِ فطرت عمل کی وضاحت کرتے ہوئے بتاتا ہے کہ کئی سال قبل اس جگہ پر ایک شیرنی نے دو بچے دئے تھے لیکن جنم دینے کے بعد شیرنی نے بچوں کو لاوارث چھوڑ دیا۔ تب رچرڈسن نے ان بچوں کی دیکھ بھال کی اور جب وہ بڑے ہو گئے تو انہیں واپس اس جگہ پر چھوڑ دیا۔ یہ شیرنی انہی دو بچوں میں سے ایک تھی جو اب جوان ہو چکی تھی۔ اس نے اتنے سالوں بعد رچرڈ کو دیکھا اور حیران کن طور پر اسے پہچان لیا اور نقصان پہنچانے کی بجائے اس سے لاڈ کرنے لگی۔

loading...