اشاعت کے باوقار 30 سال

آج کا دن تاریخ میں

جونز ٹاؤن میں اجتماعی خود کشی

ڈوکلام تنازع، چین کے ساتھ بات چیت جاری رکھیں گے

ڈوکلام تنازع، چین کے ساتھ بات چیت جاری رکھیں گے

نئی دہلی: بھارت نے کہا ہے کہ وہ ڈوکلام تنازع کے باہمی قابل قبول حل کے لیے چین کے ساتھ بات چیت جاری رکھے گا، لداخ جیسے واقعات نہ تو ہندوستان کے حق میں ہیں اور نہ ہی چین کے حق میں بھارتی وزارت خارجہ سے جاری بیان میں وزارت کے ترجمان رویش کمار نے کہا ہے کہ میں یہ تصدیق کر سکتا ہوں کہ 15 اگست کو پینگونگ تسو پر ایک واقعہ رونما ہوا جس پر دونوں جانب کے مقامی فوجی کمانڈروں نے بات کی۔ اس قسم کے واقعات کسی کے حق میں نہیں ہیں ہمیں امن و امان قائم رکھنا چاہیے۔ رویش کمار نے یہ بھی نہیں بتایا کہ آئندہ ماہ بر کس پانچ ممالک (برازیل، روس، انڈیا، چین اور جنوبی افریقہ کی تنظیم) کے سربراہی اجلاس میں شرکت کرنے کے لیے انڈین وزیر اعظم نریندر مودی چین جائیں گے یا نہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انھوں نے کہا کہ 'یہ حساس مسئلہ ہے۔ ہم چین کے ساتھ بات چیت کرتے رہیں تاکہ دونوں کے لیے قابل قبول حل تک پہنچا جا سکے۔ سرحدی علاقوں میں امن و امان دو طرفہ تعلقات کے فروغ کی اہم شرائط ہیں جب ان سے یہ پوچھا گیا کہ ڈوکلام کا تنازع کب ختم ہو گا تو انھوں نے کہا کہ میں کوئی نجومی نہیں اس لیے پیش گوئی نہیں کر سکتا۔

loading...