اشاعت کے باوقار 30 سال

بل گیٹس نے اپنے اثاثوں کا 5 فیصد حصہ عطیہ کر دیا

بل گیٹس نے اپنے اثاثوں کا 5 فیصد حصہ عطیہ کر دیا

لندن: بل گیٹس دنیا کے امیر ترین شخص کا اعزاز برسوں سے اپنے نام کیے ہوئے ہیں تاہم انہیں دنیا بھر میں فلاحی سرگرمیوں کی وجہ سے زیادہ جانا جاتا ہے۔ اور اب انہوں نے اپنے اثاثوں کا پانچ فیصد حصہ عطیہ کر دیا ہے۔ بلومبرگ کی رپورٹ کے مطابق بل گیٹس نے 4.6 ارب ڈالرز (لگ بھگ چار کھرب 84 ارب روپے سے زائد) عطیہ کیے ہیں اور اس مقصد کے لیے انہوں نے چھ جون کو 64 ملین شیئرز کو عطیہ کیا۔ یہ 2000 کے بعد بل گیٹس کی جانب سے دیا جانے والا سب سے بڑا عطیہ ہے۔ 2000 میں انہوں نے پانچ ارب ڈالرز اپنے فلاحی ادارے بل اینڈ ملینڈا گیٹس فاؤنڈیشن کے نام عطیہ کیے تھے۔ رپورٹ میں یہ واضح نہیں کیا گیا کہ بل گیٹس نے اربوں ڈالرز کس مقصد کے لیے عطیہ کیے ہیں تاہم توقع کی جا سکتی ہے کہ یہ گیٹس چیریٹی کے پاس جائیں گے۔ اس عطیے کے بعد اس ادارے کو بل گیٹس کی جانب سے دیئے جانے والے عطیات کی مالیت اٹھارہ ارب ڈالرز سے زائد ہو جائے گی۔ بل گیٹس نے اپنی دولت کا زیادہ تر حصہ فلاحی سرگرمیوں پر لگانے کا اعلان کر رکھا ہے اور ابھی انہوں نے مائیکرو سافٹ میں اپنے 38 فیصد شیئرز عطیہ کیے۔ مگر یہ ان کی دولت کا بہت معمولی حصہ ہی قرار دیا جا سکتا ہے کیونکہ ان کے مجموعی اثاثے 85 ارب ڈالرز سے زائد ہیں اور ان میں موجودہ عطیہ شامل نہیں۔ وہ اور ان کی اہلیہ ملینڈا اپنی دولت کو اپنی ذات یا اپنے تینوں بچوں تک محدود رکھنے میں دلچسپی نہیں رکھتے اور بل گیٹس کے اپنے الفاظ 'مجھے نہیں لگتا کہ بچوں کو اپنی دولت میں حصہ دار بنانا کوئی اچھا خیال ہے'۔

loading...