اشاعت کے باوقار 30 سال

لندن کا پرانا گھڑیال ’بگ بین‘ مرمت کی غرض سے خاموش

لندن کا پرانا گھڑیال ’بگ بین‘ مرمت کی غرض سے خاموش

لندن ۔: برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں قائم 157 سال پرانا گھڑیال ’بگ بین‘ مرمت کے غرض سے اگلے چار سال کے لیے خاموش ہونے جا رہا ہے۔خبر رساں اداروں کے مطابق ’بگ بین‘ 21 اگستکو 2017ء کو گیارہ کا گھنٹہ پورا کرکے بجے گا اور اس کے بعد چار سال کے لیے خاموش ہوجائے گا۔خیال رہے کہ لندن کا یہ مشہور زمانہ گھڑیال ایک سو ستاون سال پرانا ہے۔ طویل عرصہ گذرنے کے بعد اس میں خرابیاں پیدا ہونے کے ساتھ دراڑیں بھی پڑ گئی ہیں۔ برطانوی حکومت ایک عرصے سے اس گونج دار آواز والے گھڑیال کو دس ٹن کے ’لٹل جان‘ گھنٹے سے تبدیل کرنے پر غور کررہی تھی۔’بگ بین‘ کے ایک محافظ ’اسٹیو جاگز‘ نے بتایا کہ ’مرمت کا پروگرام مکمل ہونے کے بعد یہ گھڑیال طویل مدت تک مزید کام کرسکے گا۔ مرمتی پروگرام میں الیزابیتھ ٹاور جس کی گود میں یہ گھڑیال واقع ہے کی مرمت بھی شامل ہے۔ جاگز نے شہریوں پر زور دیا کہ وہ چار سال کے لیے خاموش ہونے سے قبل گھڑیال کی آخری آواز کو سننے کے لیے ضرور آئیں۔خیال رہے کہ لندن میں پارلیمان کی عمارت ویسٹ منسٹر محل میں واقع گھڑیال کا ٹاور 96 میٹر بلند ہے۔ 13.7 ٹن وزنی اس گھڑیال کو ’بیگ بین‘ کا نام دیا گیا۔ یہ گھڑیال اگرچہ اگلے چار سال کے دوران گھنٹہ پورا ہونے کی گھنٹی تو نہیں بجائے گا البتہ یہ متبادل مشین کی مدد سے درست اوقات دکھاتا رہے گا۔یہ گھڑیال گذشتہ ایک سو ستاون سال سے بلا توقف ہرگھنٹے بعد بجتا رہا ہے۔ تاہم مخصوص اوقات بالخصوص سال نو کے موقع پر اس کی آواز بند کی جاتی ہے۔ اس کے علاوہ سنہ 1983ء اور 1985ء کے دوران اور 2007ء کے دوران مرمتی کام کی وجہ سے اسے روکا گیا تھا۔گھڑیال کو ’بگ بین‘ کا نام دیے جانے کی مختلف روایات بیان کی جاتی ہیں۔ ایک قیاس یہ ہے کہ اسے یہ نام اس کے منصوبہ ساز انجینیر بنجمن ھال کی مناسبت سے دیا گیا جب کہ ایک خیال اسے یہ نام مشہور باکسر بن کاؤنٹ کی نسبت سے دیا گیا۔

loading...